Thursday , June 29 2017
Home / شہر کی خبریں / آئندہ سال سے 6 ہزار اسکولس میں بائیو میٹرک نظام پر عمل

آئندہ سال سے 6 ہزار اسکولس میں بائیو میٹرک نظام پر عمل

بنیادی سہولتوں کی فراہمی کیلئے ورکرس کے تقرر کی منظوری ۔ ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری
حیدرآباد 2 مئی (سیاست نیوز) ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری نے آئندہ تعلیمی سال سے پہلے مرحلہ میں ریاست کے 6 ہزار اسکولس میں بائیو میٹرک نظام پر عمل آوری کا اعلان کیا ہے۔ 84 نئے منڈلس میں کے جی بی وی اسکولس 29 اضلاع میں لڑکوں کے لئے کستوربا اسکولس شروع کرنے کا اعلان کیا۔ اسکولس میں بنیادی سہولتوں کی فراہمی کیلئے ورکرس کا تقرر کرنے کی منظوری دی ہے۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے آج سکریٹریٹ میں تعلیمی حکمت عملی کا جائزہ لینے محکمہ تعلیم کے اعلیٰ عہدیداروں کا جائزہ اجلاس طلب کیا۔ ریاست کے تعلیمی شعبہ کو مزید مستحکم و معیاری بنانے مرکز سے زیادہ فنڈس حاصل کرنے منصوبہ بندی کو قطعیت دی۔ انھوں نے کہاکہ محکمہ تعلیم میں بڑے پیمانے پر اصلاحات لانے سے ثمرآور نتائج برآمد ہورہے ہیں۔ مرکز سے مسلسل رابطہ بنانے کے باعث سروا سکھشا ابھیان کیلئے 300 کروڑ اور راشٹریا مدھیامیکا سکھشا ابھیان کیلئے 110 کروڑ روپئے جاری ہوئے ہیں۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہاکہ ریاست میں ڈیمانڈ کے مطابق نئے اسکولس قائم کرنے حکومت پوری طرح تیار ہے۔ انھوں نے عہدیداروں کو ہدایت دی کہ وہ نئے تعلیمی سال کے آغاز سے فنڈس کی اجرائی کیلئے مرکز سے نمائندگی کریں اور جو فنڈس حاصل ہورہے ہیں جلد اس کے استعمال سرٹیفکٹس روانہ کرنے پر زور دیا۔ کڈی سری ہری نے کہاکہ اضلاع کی تنظیم جدید کے بعد ریاست میں 84 نئے منڈل قائم ہوئے ہیں۔ ان تمام 84 منڈلس میں کے جی بی وی قائم کئے جائیں گے۔ 29 اضلاع میں لڑکوں کیلئے کستوربا اسکولس قائم کئے جائیں گے۔ محکمہ تعلیم نئے تعلیمی سال کے آغاز کے ساتھ ہی اقامتی اسکولس، ماڈل اسکول، کے جی بی وی، ضلع پریشد وغیرہ کے جیسے 6 ہزار اسکولس میں بائیو میٹرک نظام پر عمل کیا جائے گا۔ اسکولس میں بیت الخلاؤں کی صاف صفائی،ڈ پودوں کو پانی ڈالنے، اسکول کی صاف صفائی کیلئے ہر اسکول میں ورکرس کا انتخاب کرنے کی منظوری دے رہی ہے۔ 100 طلبہ سے کم والے اسکولس میں ایک ورکرس کی خدمات سے استفادہ کیا جائیگا۔ تمام کاموں کیلئے ہر اسکول کو 20 ہزار روپئے ادا کئے جائیں گے۔ 100 تا 300 طلبہ والے اسکولس میں دو ورکرس رکھنے کی گنجائش رہے گی اور 50 ہزار روپئے خصوصی فنڈس دیئے جائیں گے۔ 500 سے زیادہ طلبہ والے اسکولس میں تین ورکرس رکھنے کی گنجائش رہے گی اور انھیں 75 ہزار روپئے ادا کئے جائیں گے۔ اسکولس کے آغاز کے ساتھ ہی ان فنڈس کی پہلی قسط جاری کرنے کا اعلان کیا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT