Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / آئندہ چار برسوں میں حیدرآباد کے تمام غریبوں کو ڈبل بیڈ روم مکانات

آئندہ چار برسوں میں حیدرآباد کے تمام غریبوں کو ڈبل بیڈ روم مکانات

بی جے پی قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی تقریب ، وزیر آئی ٹی کے ٹی راما راؤ کا خطاب
حیدرآباد۔/14جنوری، (سیاست نیوز) وزیر انفارمیشن ٹکنالوجی کے ٹی راما راؤ نے کہا کہ آئندہ چار برسوں میں گریٹر حیدرآباد کے تمام غریب خاندانوں کو ڈبل بیڈ روم کے مکانات فراہم کئے جائیں گے۔ وہ بی جے پی قائدین کی ٹی آر ایس میں شمولیت کی تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ تلنگانہ بھون میں بی جے پی کے سابق بلدی فلور لیڈر بنگارو پرکاش نے اپنے حامیوں کے ساتھ ٹی آر ایس میں شمولیت اختیار کرلی۔ کے ٹی راما راؤ اور وزیر ٹرانسپورٹ مہیندر ریڈی نے ان قائدین کا ٹی آر ایس میں استقبال کیا اور پارٹی کا کھنڈوا پہنایا۔ کے ٹی آر نے مختلف جماعتوں سے قائدین کی آمد کو خوش آئند قرار دیا اور کہا کہ حکومت کی ترقیاتی اور فلاحی اسکیمات سے متاثر ہوکر قائدین شرکت کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سنہرے تلنگانہ کا جو منصوبہ چیف منسٹر کے چندر شیکھر راؤ نے تیار کیا ہے اس کو روبہ عمل لانا تلنگانہ کے ہر شہری کی ذمہ داری ہے۔ سنہرے تلنگانہ کی تشکیل میں حصہ داری کیلئے دیگر جماعتوں سے قائدین شامل ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے غریبوں کیلئے جو وعدے کئے تھے ان پر عمل آوری کا آغاز ہوچکا ہے۔ کے ٹی آر نے کہا کہ حکومت کی فلاحی اسکیمات کے فوائد حقیقی مستحقین تک پہنچانے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں اور گریٹر حیدرآباد کے حدود میں لاکھوں خاندان حکومت کی اسکیمات سے مستفید ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ترقیاتی اور فلاحی ایجنڈے کے سبب گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کی کامیابی یقینی ہے۔

ڈبل بیڈ روم مکانات کی تعمیر کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ڈبل بیڈ روم مکانات کے بارے میں غریب خاندانوں کو فکر مند ہونے کی ضرورت نہیں ہے، آئندہ چار برسوں میں کوئی بھی غریب خاندان مکان سے محروم نہیں رہے گا۔ انہوں نے کہا کہ غریب خواتین اور ضعیفوں کیلئے نہ صرف وظیفہ کی رقم میں اضافہ کیا گیا بلکہ دونوں استفادہ کنندگان کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس حکومت کے فلاحی اقدامات ملک میں مثالی ہیں اور دیگر ریاستیں تلنگانہ کی اسکیمات کو اختیار کرنے کی تیاری کررہی ہیں۔ انہوں نے عوام سے اپیل کی کہ وہ گریٹر حیدرآباد کے انتخابات میں ٹی آر ایس کو کامیابی سے ہمکنار کرتے ہوئے شہر کو ترقی کی راہ پر گامزن کریں۔ انہوں نے کہا کہ شہر کی ترقی کیلئے حکومت جامع منصوبہ رکھتی ہے اور برقی اور پانی کے مسائل کی مستقل یکسوئی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہا کہ گرما میں شہر کو برقی کٹوتی سے پاک رکھا گیا اور پانی کے مسئلہ کی مستقل یکسوئی کیلئے کرشنا اور گوداوری سے پائپ لائن بچھائی جارہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ حیدرآباد کی آبی ضرورت کی تکمیل کیلئے دو ذخائر آب کی تعمیر کا منصوبہ ہے۔ کے ٹی آر نے گریٹر انتخابات میں ٹی آر ایس کی کامیابی کو یقینی قرار دیتے ہوئے کہا کہ تلنگانہ بھون میں ابھی سے جشن کا ماحول ہے اور کارکن انتخابات سے قبل ہی کامیابی کی خوشی منارہے ہیں۔

کے ٹی آر نے کہا کہ تلنگانہ بھون کے ماحول کو دیکھتے ہوئے اندازہ ہوتا ہے کہ کوئی بھی طاقت گریٹر حیدرآباد پر ٹی آر ایس کے قبضہ کو روک نہیں پائے گی۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ بھون کی طرح خوشی اور جشن کا ماحول کسی اور پارٹی کے دفتر میں نہیں ہے۔ متحدہ آندھرا میں پروپگنڈہ کیا گیا کہ ریاست کی تقسیم کی صورت میں تلنگانہ پسماندہ ریاست بن جائے گی لیکن ٹی آر ایس نے ان اندیشوں کو غلط ثابت کردکھایا اور ریاست تیزی سے ترقی کی راہ پر گامزن ہے۔ انہوں نے کہا کہ گریٹر انتخابات میں کامیابی کے بعد منصوبہ بند انداز میں شہر کو ترقی دی جائے گی اور حیدرآباد کا شمار دنیا کے ترقی یافتہ شہروں میں ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ دیگر ریاستوں سے آنے والے افراد کو خوفزدہ ہونے کی ضرورت نہیں ہے حکومت تمام کے ساتھ یکساں سلوک برقرار رکھے گی۔ انہوں نے سیما آندھرائی باشندوں کو مشورہ دیاکہ وہ کسی بھی اندیشے و پروپگنڈہ کا شکار نہ ہوں۔ انہوں نے کہا کہ تلنگانہ تحریک اور پھر حکومت کے قیام کے بعد سے سیما آندھرائی عوام کے خلاف نفرت اور تشدد کا ایک بھی واقعہ پیش نہیں آیا۔ وزیر ٹرانسپورٹ مہیندر ریڈی نے کہا کہ گریٹر حیدرآباد میں رائے دہندوں نے ٹی آر ایس کو کامیاب بنانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT