Saturday , September 23 2017
Home / ہندوستان / آئی ایس کا مبینہ ہندوستانی نوجوانوں پر مشتمل ویڈیو

آئی ایس کا مبینہ ہندوستانی نوجوانوں پر مشتمل ویڈیو

این آئی اے جائزہ لینے میں مصروف ۔ نوجوانوں کی شناخت کا عمل جاری
نئی دہلی 23 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) این آئی اے کی جانب سے آئی ایس آئی ایس کے جاری کردہ ایک ویڈیو کا جائزہ لیا جا رہا ہے جس میں مبینہ طور پر ہندوستانی لڑاکوں نے خبردار کیا ہے کہ وہ بابری مسجد کی شہادت ‘ کشمیر اور مظفر نگر فسادات کے دوران مسلمانوں پر مظالم کا انتقام لینے ہندوستان کو نشانہ بنائیں گے ۔ این آئی اے کی جانب سے اس ویڈیو میں دکھائے گئے تمام چھ افراد کی شناخت کی کوشش کی جا رہی ہے ۔ یہ ویڈیو 22 منٹ کا ہے جسے گذشتہ جمعہ کو ٹیلی کاسٹ کیا گیا تھا جسے بعد میں نکال دیا گیا ۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ ان میں کچھ کا تعلق مہاراشٹرا سے ہوسکتا ہے اور ایک یا دو اعظم گڑھ کے ہوسکتے ہیں۔ ذرائع کے بموجب ان کی شناخت کیلئے گرفتار شدہ مبینہ آئی ایس کارکن اریب ماجد کی مدد لی جا رہی ہے ۔ اس ویڈیو میں ایک شخص نے ادعا کیا کہ جس وقت پولیس نے باٹلہ ہاوز پر دھاوا کیا تھا اس وقت وہ وہاں موجود تھا اور فرار ہوگیا تھا ۔ یہ واضح نہیں ہوسکا ہے کہ یہ شخص اسی گھر میں موجود تھا جہاں مبینہ انڈین مجاہدین کارکن ایک انکاؤنٹر میں ہلاک ہوئے تھے ۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک انجینئرنگ طالب علم فہد تنویر شیخ تھانے کا ساکن تھا جس نے 2014 میں شام کا سفر کیا تھا اور اس کی واضح شناخت ہوگئی ہے ۔ این آئی اے نے اس کے خلاف مختلف دفعات کے تحت غیاب میں چارچ شیٹ پیش کی ہے ۔ ان نوجوانوں کی شناخت کے دوران یہ شبہ پیدا ہوا ہے کہ ان میں کچھ پہلے انڈین مجاہدین کا حصہ تھے اور بعد میں انہوں نے آئی ایس میں شمولیت اختیار کرلی تھی ۔ یہ شبہ کیا جا رہا ہے کہ 2014 کے بعد سے انڈین مجاہدین کے کئی کارکنوں نے تنظیم سے قطع تعلق کرکے آئی ایس میں شمولیت اختیار کی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT