Sunday , October 22 2017
Home / ہندوستان / آئی ایس کی ہندوستان اور بیرون ملک حملوں کی سازش

آئی ایس کی ہندوستان اور بیرون ملک حملوں کی سازش

این آئی اے کا دہلی کورٹ میں دعویٰ ، تین حامیوں کی تحویل میں دس دن کی توسیع
نئی دہلی ۔ 9 فبروری۔ ( سیاست ڈاٹ کام ) تین مشتبہ دہشت گردوں کو جنھیں آئی ایس کے ساتھ مبینہ روابط اور ہندوستان و دیگر ممالک میں دہشت گرد حملوں کی سازش کے الزام پر یو اے ای سے واپس بھیج دیا گیا تھا آج دہلی کی عدالت نے 10 دن کیلئے این آئی اے تحویل میں دیدیا۔ شیخ اظہر الاسلام ، محمد فرحان شیخ اور عدنان حسین کو جن کے چہروں پر نقاب اوڑھا ہوا تھا ڈسٹرکٹ جج امرناتھ کے روبرو پیش کیا گیا ۔ این آئی اے تحویل کی مدت آج ختم ہونے کی وجہ سے اُنھیں بند کمرے میں ہوئی سماعت کیلئے عدالت میں پیش کیا گیا ۔ ذرائع نے بتایا کہ این آئی اے نے تین ملزمین کو مزید 12 دن پولیس تحویل میں توسیع کی خواہش کی ۔ این آئی اے کا کہنا ہے کہ آئی ایس آئی ایس کی ہندوستان اور بیرون ممالک ایک بڑی سازش کو بے نقاب کرنے کیلئے ان تینوں سے تفتیش ضروری ہے۔ سوال جواب کے دوران ملزمین نے یہ انکشاف کیا کہ وہ آئی ایس کے سرگرم حامی تھے اور انٹرنیٹ ؍ ٹیلیفون و دیگر مراسلاتی ذرائع سے وہ کئی سرگرم ارکان کے ساتھ قریبی ربط رکھے ہوئے تھے ۔ این آئی اے نے اپنی ریمانڈ درخواست میں یہ بات بتائی ۔ ایجنسی نے مزید یہ دلیل پیش کی کہ ان تینوں ملزمین کو تفتیش کیلئے تحویل میں دینے کی اس لئے بھی ضرورت ہے کیونکہ ہندوستان اور بیرون ملک آئی ایس سرگرمیوں کے علاوہ وسیع تر مجرمانہ سازش کا پتہ چلایا جاسکے ۔ یہ بھی معلوم ہو کہ آئی ایس غیرملکی تارکین وطن اور اندرون ملک شہریوں کا کس طرح تقرر کررہی ہے ۔ اب تک کی تفتیش کے دوران کئی حقائق کا انکشاف ہوا ہے اور یہ بھی پتہ چلا ہے کہ ملزمین کے آئی ایس کے قریبی اور سرگرم کارکنوں کے ساتھ روابط تھے ۔ اس کے علاوہ یہ بھی معلوم ہوا کہ آئی ایس اپنی سرگرمیوں کو وسعت دینے کی منصوبہ بندی کررہی ہے ۔ ایڈوکیٹ ایم ایس خان نے فرحان اور عدنان کی طرف سے عدالت میں پیش ہوتے ہوئے این آئی اے درخواست کی مخالفت کی اور کہا کہ اُن کے موکلین سے پہلے ہی تفصیلی تفتیش کی جاچکی ہے لہذا تحویل میں توسیع کی کوئی ضرورت نہیں ۔ عدنان کا تعلق کرناٹک اور فرحان کا مہاراشٹرا اور شیخ اظہر کا جموںو کشمیر سے ہے ۔ ان تینوں کو این آئی اے نے 29 جنوری کو اُس وقت گرفتار کیا جب یو اے ای نے انھیں واپس بھیج دیا تھا ۔ اندرا گاندھی انٹرنیشنل ایرپورٹ پر آمد کے فوری بعد این آئی اے نے انھیں حراست میں لے لیا تھا ۔ یہ تینوں مشتبہ افراد دیگر نامعلوم ساتھیوں کے ہمراہ مبینہ طورپر دہشت گرد حملوں کی سازش میں ملوث ہیں۔

TOPPOPULARRECENT