Friday , August 18 2017
Home / کھیل کی خبریں / آئی پی ایل :دو طاقتور ٹیموں بنگلور وکولکتہ کا آج ‘ دلچسپ ٹکراؤ متوقع

آئی پی ایل :دو طاقتور ٹیموں بنگلور وکولکتہ کا آج ‘ دلچسپ ٹکراؤ متوقع

ویراٹ کوہلی کی ٹیم بیٹنگ فارم سے پر امید ۔ اسپنرس کے بہتر مظاہرے سے گوتم گمبھیر کے حوصلے بھی بلند

کولکتہ 15 مئی ( سیاست ڈاٹ کام ) دوسری ٹیموں کیلئے مشکلات پیدا کرتی ہوئی رائل چیلنجرس بنگلور کا آئی پی ایل کے ایک میچ میں کل دو مرتبہ کی چمپئن کولکتہ نائیٹ رائیڈرس سے ہونے والا ہے ۔ یہ مقابلہ زبردست ہونے کی امید کی جا رہی ہے ۔ کولکتہ کے ایڈن گارڈن پر دونوں ٹیمیں ایک دوسرے پر سبقت لیجانے کی کوشش کرینگی ۔ اب جبکہ تین میچس باقی ہیں دونوں ہی ٹیمیں ٹیبل ٹاپ مقام حاصل کرنے کی جدوجہد میں مصروف ہیں اور ایک دوسرے کو نیچا دکھانا چاہتی ہیں۔ کل ہوئے اپنے اپنے میچس میں دونوں ہی ٹیموں نے کامیابی حاصل کی ہے ۔ پوائنٹس کے اعتبار سے کولکتہ نائیٹ رائیڈرس کو سبقت حاصل ہے اور اگر وہ صرف ایک کامیابی اور حاصل کرلیتی ہے تو وہ 16 پوائنٹس کے جادوئی ہندسہ تک پہونچ جائیگی جس کے نتیجہ میں وہ مالا مال ٹورنمنٹ کی آخری 4 ٹیموں کے مرحلہ میں رسائی حاصل کرلیگی ۔ رائل چیلنجرس بنگلور کے 10 پوائنٹس ہے اور وہ چھٹے مقام پر ہے ۔ اس کے سامنے اب لیگ مرحلہ میں مابقی بچے تقریبا تمام میچس میں کامیابی حاصل کرنے کا مشکل ترین نشانہ ہے ۔ اگر وہ اپنے مابقی تمام میچس میں کامیابی حاصل کرتی ہے تو اس کے پلے آف مرحلہ میں داخل ہونے کے امکانات برقرار رہتے ہیں۔ اس چیلنج کو قبول کرتے ہوئے رائل چیلنجرس بنگلور نے کل گجرات لائینس کے خلاف اپنے میچ میں 144 رنوں سے کامیابی حاصل کی تھی جو ٹوئنٹی 20 آئی پی ایل کے نویں سیزن کی سب سے بڑی کامیابی ہے ۔

رائل چیلنجرس بنگلور کیلئے ویراٹ کوہلی اور اے بی ڈی ولئیرس اپنے پورے فارم میں بیٹنگ کرتے ہیں تو مخالف ٹیم کیلئے مشکلات بڑھتی ہی جاتی ہیں لیکن دوسرے بلے باز اب تک کوئی خاطر خواہ مظاہرہ نہیں کر پائے ہیں۔ کل کے میچ میں کوہلی نے 55 گیندوں میں 109رن بنائے تھے جبکہ ڈی ولئیرس 52 گیندوں میں 129 رن پر ناٹ آوٹ رہے تھے ۔ دونوں نے گجرات کے بولرس کی دھجیاں اڑا دی تھیں اور بہترین اسٹروکس لگائے تھے ۔ بنگلور کی ٹیم نے کل کے میچ میں تین وکٹس کے نقصان پر 248 رنز اسکور کئے تھے ۔ ٹورنمنٹ میں اب تک سب سے زیادہ رنز بنانے والے ویراٹ کوہلی نے جاریہ سیزن کی تیسری سنچری اسکور کی تھی اور ان کے رنوں کی تعداد 677 تک پہونچ گئی ہے ۔ ڈی ولئیرس دوسرے نمبر پر ہیں اور انہوں نے 538 رنز اسکور کئے ہیں۔ جہاں رائل چیلنجرس بنگلور کی بیٹنگ لائین اپ کوہلی اور ڈی ولئیرس کی وجہ سے طاقتور دکھائی دیتی ہے وہیں کولکتہ نائیٹ رائیڈرس کے تین اسپنرس سنیل نارائن ‘ شکیب الحسن اور پیوش چاؤلہ بہترین بولنگ کر رہے ہیں اور کل کے میچ میں انہوں نے پونے سوپر جائینٹس کو 17.4 اوورس میں چھ وکٹس پر 103 رنوں تک محدود رکھا تھا ۔ اس میچ میں کولکتہ کو ڈک ورتھ لیوس سسٹم کے تحت آٹھ وکٹس سے کامیابی حاصل ہوئی تھی ۔ دوبارہ فٹ ہوگئے سنیل نارائن نے حالانکہ کل کے میچ میں کوئی وکٹ نہیں لی لیکن انہوںنے متاثر کن بولنگ کی اور 3.4 اوورس میں صرف 10 رن دئے تھے اور انہوں نے 14 ڈاٹ بالس پھینکے تھے ۔ کل کے میچ میں ایم ایس دھونی جیسا بلے باز بھی 22 رنوں میں صرف 8 رن ہی بناسکا تھا ۔ نارائن کی واپسی سے کولکتہ کے حوصلے بھی بلند ہیں ایسے میں دونوں ٹیموں کے مابین دلچسپ مقابلہ دیکھنے کو مل سکتا ہے ۔

TOPPOPULARRECENT