Saturday , September 23 2017
Home / شہر کی خبریں / آدی واسی ضلع تشکیل دینے کی خواہش

آدی واسی ضلع تشکیل دینے کی خواہش

سی پی آئی ایم ایل کی صدرجمہوریہ سے نمائندگی
حیدرآباد ۔ 8 اکٹوبر (این ایس ایس) سی پی آئی ایم ایل نے صدرجمہوریہ ہند سے اس بات کی خواہش کی کہ وہ تلنگانہ حکومت کو دستور کے پانچویں شیڈول کے مطابق آدی واسیوں کیلئے خصوصی اضلاع تشکیل دینے کی ہدایت دیں۔ ایک نوٹ میں پارٹی قائدین کے ایس وینکٹیشور راؤ و دیگر نے الزام عائد کیا چیف منسٹر کے سی آر ریاست میں آدی واسیوں کو مکمل طور پر نظرانداز کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ریاست تلنگانہ میں آدی واسی قبائیل اقوام کی قابل لحاظ تعداد رہتی بستی ہے۔ سی پی آئی ایم ایل نیو ڈیموکریسی قائدین نے کہا چیف منسٹر نے نئے اضلاع کی تشکیل میں عوامی احساسات، جذبات کو ملحوظ رکھنے کا وعدہ کیا تاہم یہ وفا نہ ہوسکا جبکہ عوام کی مرضی کے خلاف بایارام، گرلا منڈلوں کو محبوب آباد حلقہ اسمبلی میں ضم کیا گیا۔ بایارام منڈل کے تقریباً 8 ہزار افراد نے اس پر اعتراضات کئے تھے ۔ بایارام منڈل پریشد نے ایک قرارداد بھی منظور کی تھی۔ تاہم ریاستی حکومت نے ان سب کو خاطر میں  نہیںلارہی ہے۔ سی پی آئی ایم ایل قائدین نے چیف منسٹر سے کہا کہ عادل آباد تا بھدراچلم آدی واسی خواتین کو نشانہ کرتے ہوئے آدی واسی اضلاع کی تشکیل عمل میں لائیں۔ سی پی آئی ایم ایل قائدین نے ریاستی حکومت سے اس بات کا مطالبہ کیا کہ عادل آباد، ایلندو، بھدراچلم، امراآباد اضلاع کو آصف آباد کے ساتھ اضلاع تشکیل دیئے جائیں۔

TOPPOPULARRECENT