Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / آر ایس ایس ، ملک میں انار کی پیدا کرنے کوشاں

آر ایس ایس ، ملک میں انار کی پیدا کرنے کوشاں

مسلم قیادت ، فرقہ پرستوں کی بی ٹیم کے طور پر سرگرم ، اردو مسکن ہال خلوت میں سمینار، سید عزیز پاشاہ اور دیگر کا خطاب
حیدرآباد ۔ /13 اکٹوبر (راست) آر ایس ایس ملک میں انار کی کی صورتحال پیدا کرنے کوشش کررہی ہے ۔ بی جے پی حکومت میں سنگھ پریوار بے لگام ہوگیا ہے ۔ طاقت کے زور پر ہندو تہذیب ، ہندو کلچر کو ملک کے عوام پر تھوپنے کی زہریلی کوشش ہورہی ہے اور کچھ مسلمان فرقہ پرستی کے نعرہ کے ساتھ ان کی بی ٹیم بن گئے ہیں جو ملت کے لئے خطرناک ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار خلوت اُردو مسکن ہال میں منعقدہ سمینار جس کی صدارت جناب محمد مشتاق ملک صدر تحریک مسلم شبان نے کی مقررین کرام جناب عزیز پاشاہ ایم پی (سابق) سی پی آئی ،مولانا حامد محمد خاں امیر جماعت اسلامی تلنگانہ ، مولانا سید حامد حسین شطاری سنی علماء بورڈ ، جناب سید طارق پاشاہ قادری ایڈوکیٹ صوفی اکیڈیمی، مولانا علی پاشاہ قادری انجمن قادریہ نے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ جناب محمد مشتاق ملک صدر تحریک مسلم شبان نے اپنے صدارتی خطاب میں کہا کہ مسلمانوں کے بغیر ہندوستان متحد نہیں رہ سکتا ۔ یہاں کی اکثریت ذات پات میں بٹی ہوئی ہے ۔ مگر سنگھ پریوار مسلمانوں کو بدنام کرنے اُن کے مذہبی اور ملی تشخص کو ختم کرنے کی کوشش کررہا ہے ۔ ہندوستان دنیا کی بڑی جمہوریت کے ساتھ ایک سیکولر ملک ہے ۔ دستوری حکومت ہی ملک کو ترقی کے زینہ پر لے جاسکتی ہے ۔ فرقہ پرستی ملک میں نہ صرف نفرت عداوت پیدا کرے گی بلکہ ملک کی سالمیت اور سلامتی کا مسئلہ پیدا کردے گی ۔ آر ایس ایس کو ملک کی ترقی سے مطلب نہیں ہے ۔ صرف اپنے اسلام دشمن نظریہ سے دلچسپی ہے ۔ جناب محمد مشتاق ملک ’’ ملک میں بڑھتی فرقہ پرستی ، تشویشناک ‘‘ کے عنوان پر منعقدہ دکن ڈیولپمنٹ سوسائیٹی کے سمینار میں صدارتی خطاب فرمارہے تھے ۔ انہوں نے کہا کہ کچھ مسلمان بی جے پی کی بی ٹیم کے طور پر کام کررہے ہیں جو ملت کے لئے انتہائی تشویش کی بات ہے ۔ فرقہ پرستی کے مقابلہ کے لیے تمام غیر بی جے پی جماعتیں متحد ہوں اور مسلمان پہلے مرحلے کے طور پر بی جے پی اور آر ایس ایس نظریہ کی شکست کیلئے کام کریں ، توحید و اسلام یعنی ایمان پر ملک کا مسلمان سمجھوتہ نہیں کرسکتا ۔ جان دیگا مگر ایمان کا سودا نہیں کرے گا ۔ مسلم معاشرے کی برائیوں اور بے جا رسوم و روایات پر سخت تنقید کی ۔ شادیوں میں سادگی برتنے اور نوجوان ایک نئے انقلاب کیلئے کھڑے ہونے پر جناب محمد مشتاق ملک نے زور دیا ۔ جناب عزیز پاشاہ سابق ایم پی نے فرقہ پرستی کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ ملک کی طاقت و حدت میں پوشیدہ ہے ۔ سنگھ پریوار بے لگام ہوگیا ہے ۔ وزیراعظم اس کو قابو میں کریں ۔ کوئی خاص مذہب کو ملک پر مسلط نہیں کیا جاسکتا ۔ یہ ملک سیکولر بھی ہے اور جمہوری بھی ہے ۔ دادری واقعہ کی شدید مذمت کی گئی مگر وزیراعظم نے زبان نہیں کھولی ۔ مولانا حامد محمد خان امیر جماعت اسلامی ہند نے کہا کہ گھر واپسی ، وندے ماترم ، گائے کا گوشت ، سوریہ نمسکار ، سرسوتی پوجا جیسے مسائل اٹھائے جارہے ہیں جو مسلمانوں کے عقیدے سے ٹکراتے ہیں اور مسلمانوں کو تنگ کرنے کی کوشش کی جارہی ہے ۔ اللہ پر کامل یقین اور ایمان مسلمانوں کی طاقت اور قوت ہے ۔ اس پر کوئی سمجھوتہ ناممکن ہے ۔ مولانا سید حامد حسین شطاری سنی علماء بورڈ نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ فرقہ پرستی کا مقابلہ اتحاد سے اور فکر صحیح سے کیا جاسکتا ہے ۔ فرقہ پرستی کا مقابلہ وقت کی ضرورت ہے ۔ مولانا سید طارق پاشاہ قادری ایڈوکیٹ نے اس موقع پر مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ ظلم اورناانصافی کے خلاف مسلمان اٹھیں اور ملک میں اپنے اصولی اور جائز حق کو حاصل کرنے کے لئے ایک موثر حکمت عملی بنائیں ۔ کچھ لوگ بی جے پی کی حمایت مسلمانوں کی صفوں میں بیٹھ کر کررہے ہیں ۔ ان کا عمل ظاہر میں مسلمانوں کی حمایت والا ہے مگر یہ ایجنٹ کا کام کررہے ہیں ۔ سمینار کا آغاز قاری عبدالقیوم شاکر کی قرأت کلام پاک سے ہوا ۔ حافظ خالد علی خاں قادری کے کمسن فرزند نے ہدیہ نعت پیش کی ۔ شہ نشین پر صدر ڈیولپمنٹ اسوسی ایشن این آر آئی فیروز خاں ، محترمہ معصومہ بیگم ، محترمہ سعیدہ فاطمہ کے علاوہ تحریک مسلم شبان کے نائب صدر ایم اے غفار و دیگر موجود تھے ۔ جناب سکندر معشوقی نے کارروائی چلائی اور شکریہ ادا کیا ۔

TOPPOPULARRECENT