Saturday , October 21 2017
Home / Top Stories / آر ایس ایس تعلیمی اداروں پر قبضہ کر رہی ہے ۔ راہول گاندھی

آر ایس ایس تعلیمی اداروں پر قبضہ کر رہی ہے ۔ راہول گاندھی

للت مودی کو وطن واپس لانے سے نریندر مودی خوفزدہ ۔ حکومت پر مسلسل دباؤ ڈالنے کانگریس نائب صدر کا اعلان

نئی دہلی 13 اگسٹ ( سیاست ڈاٹ کام ) ایف ٹی آئی آئی میں جاری طویل احتجاج پر مودی حکومت کو سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کانگریس کے نائب صدر راہول گاندھی نے الزام عائد کیا کہ آر ایس ایس کی جانب سے تعلیمی اداروں پر قبضہ کیا جا رہا ہے اور جو لوگ وزیر اعظم اور بی جے پی کی مدح سرائی میں مصروف ہیں انہیں اعلی عہدے دئے جا رہے ہیں۔ راہول گاندھی کی قیادت میں کانگریس کے ایک وفد نے صدر جمہوریہ پرنب مکرجی سے ملاقات کرکے ایف ٹی آئی آئی میں اداکار گجیندر چوہان کے تقرر پر احتجاج درج کروایا ۔ راہول نے کہا کہ تعلیمی اداروں پر قابو کرنے آر ایس ایس کی خواہش کی خاطر تخلیقی امور کو کچلا جا رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ طلبا اور تعلیمی اداروں پر جن افراد کو مسلط کیا جا رہا ہے وہ اس کی اہلیت نہیں رکھتے ۔ ان کے پاس صرف یہی اہلیت ہے کہ وہ وزیراعظم اور بی جے پی کی مدح سرائی میں مصروف ہیں۔ یہ لوگ آر ایس ایس کے نظریات میں یقین رکھتے ہیں۔

گجیندر چوہان پر ایف ٹی آئی آئی کی ذمہ داری کی اہلیت نہ رکھنے کا الزام عائد کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت یہ پیام دینا چاہتی ہے کہ صلاحیتوں کو چھوڑئے بلکہ مودی اور آر ایس ایس کے درشن کیجئے اور عہدے حاصل کیجئے ۔ انہوں نے کہا کہ یہ طلبا کیلئے غلط پیام جا رہا ہے ۔ قبل ازیں راہول گاندھی نے للت مودی مسئلہ پر حکومت کی مدافعت کو مسترد کردیا اور وزیر خارجہ سشما سوراج اور وزیر اعظم نریندر مودی پر سخت تنقید کی ۔ انہوں نے مودی کو چیلنج کیا کہ وہ سابق آئی پی ایل کمشنر کو ہندوستان لائیں ۔ اپنے والد راجیو گاندھی کے خلاف سشما سوراج کے الزامات کو مسترد کرتے ہوئے کانگریس کے نائب صدر نے کہا کہ سابق وزیر اعظم کو ہندوستان میں عدالتی نظام نے بری کردیا تھا ۔ انہوں نے جوابی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وزیر فینانس ارون جیٹلی نے کل پارلیمنٹ میں تک کالے دن کے نیٹ ورک کی مدافعت کی تھی ۔ انہوں نے مزید الزام عائد کیا کہ للت مودی سیاسی نظام اور کالے دھن کے مابین ایک اہم رابطہ ہیں۔ کانگریس لیڈر نے واضح کیا کہ ان کی پارٹی للت مودی کو ہندوستان واپس لانے کیلئے وزیر اعظم پر دباؤ ڈالے گی ۔

انہوں نے کہا کہ وزیراعظم خوفزدہ ہو رہے ہیں۔ حکومت کے خلاف کانگریس کے احتجاج کی پارلیمنٹ کامپلکس میں قیادت کرتے ہوئے راہول گاندھی نے سشما سوراج کے الزامات کی تردید کی اور کہا کہ اگر واقعی انہوں نے اپنے دعوی کے مطابق صر ف انسانی بنیادوں پر للت مودی کی مدد کی ہے تو جو کچھ انہوں نے کیا ہے اس کو چھپا کیوں رہی ہیں ؟ ۔ انہوں نے وزیر اعظم کہا کہ وہ للت مودی کو ہندوستان واپس لائیں تاکہ کرکٹ کو بدعنوانی سے پاک کیا جاسکے ۔ انہوں نے کہا کہ ملک وزیر اعظم کو ایک اور موقع دیتا ہے ۔ ابھی تک ان پر بھروسہ کیا جا رہا ہے ۔ انہوں نے ریمارک کیا کہ کچھ لوگ سمجھتے ہیں کہ مودی میں صلاحیتیں ہیں۔ کچھ لوگ سمجھتے ہیںکہ نہیں ہیں۔ اگر للت مودی کو واپس نہیں لایا جاتا اور وزرا للت مودی کی مدافعت کرتے رہیں گے جیسا کہ سشما سوراج نے کیا ہے تو ہم یہ سمجھتے ہیں کہ وزیر اعظم خوفزدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم حکومت پر مسلسل دباؤ ڈالیں گے تاکہ للت مودی کو وطن واپس لایا جاسکے اور کرکٹ میں جو کچھ بھی بدعنوانیاں ہو رہی ہیں انہیں ختم کیا جاسکے ۔ انہوں نے یاد دہانی کروائی کہ حکومت حصول اراضی قانون پر کمزور پڑ گئی ہے ۔

TOPPOPULARRECENT