Sunday , August 20 2017
Home / سیاسیات / آر ایس ایس ‘ ٹیپوسلطان یوم پیدائش تقاریب کی مخالف

آر ایس ایس ‘ ٹیپوسلطان یوم پیدائش تقاریب کی مخالف

’شیر میسور‘ پر عدم روادار حکمران ہونے کا الزام ۔ ہندو تنظیموں کے احتجاج کی تائید کا اعلان
بنگلورو، 6 نومبر ( سیاست ڈاٹ کام ) کرناٹک میں سنگھ پریوار کی تنظیموں نے 18 ویں صدی کے حکمران ٹیپو سلطان کی 10 نومبر کو یوم پیدائش تقاریب سرکاری طور پر منائے جانے کی مخالفت کی ہے ۔ آر ایس ایس نے ٹیپو سلطان کو انتہائی عدم روادار حکمران قرار دیا ہے اور ان تقاریب کے خلاف احتجاج کرنے والوں کی تائید کا اعلان کیا ہے ۔ آر ایس ایس کے کرناٹک کے علاقائی سنگھ چالک وی ناگراج نے میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ عوام کی اکثریت اس کے خلاف ہے ۔ یہ درست ہے کہ ٹیپو سلطان میسور کے حکمران تھے لیکن ساتھ ہی وہ انتہائی عدم روادار حکمران تھے ۔ یہ بات تاریخ میں موجود ہے ۔ ان کی تلوار پر یہ واضح طور پر تحریر ہے کہ یہ تلوار کافروں کا قتل کرنے کیلئے ہے ۔ سنگھ پریوار کی تنظیموں نے 10 نومبر کو احتجاج منظم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ وشوا ہندو پریشد نے خبردار کیا ہے کہ اس تقریب کو درہم برہم کردیا جائے گا۔ وی ناگراج نے ادعا کیا کہ کرناٹک کے عوام ان تقاریب کے مخالف ہیںکیونکہ کئی مورخین نے ان کے دور میں عوام کے ساتھ کئے گئے سلوک کو تحریر کیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کرناٹک میں مورخین نے تحریر کیا ہے کہ ان کے دور میں چترا درگ ‘ منگلورو اور وسط کرناٹک کے عوام سے کیسا سلوک روا رکھا  گیا ۔اس پس منظر میں فطری طور پر لوگ ان تقاریب کے مخالف ہیں۔ ایک سوال کے جواب میں ناگراج نے کہا کہ آر ایس ایس کی جانب سے کوئی مظاہرے نہیں کئے جائیں گے بلکہ جو لوگ احتجاج کر رہے ہیں آر ایس ایس ان کی حامی ہے ۔ سرکاری پروگرام کو وی ایچ پی کی جانب سے درہم برہم کرنے کے اعلان سے متعلق سوال پر انہوں نے کہا کہ یہ سوال وی ایچ پی سے کیا جانا چاہئے ۔ ایک دیگر سوال پر ناگراج نے کہا کہ ملک میں کوئی عدم رواداری نہیں ہے بلکہ صرف دانشورانہ عدم رواداری کچھ مصنفین کا شیوہ بن گیا ہے اور یہ لوگ متبادل نظریات کے ابھرنے کو برداشت نہیں کر رہے ہیں۔ آر ایس ایس کے خیال میں یہ دانشوروں کی عدم رواداری ہے ۔

TOPPOPULARRECENT