Tuesday , August 22 2017
Home / Top Stories / آر ایس ایس کا قدیم ترین ٹریڈ مارک ڈریس تبدیل

آر ایس ایس کا قدیم ترین ٹریڈ مارک ڈریس تبدیل

بھورے پتلون نے 91 سال قدیم خاکی نیکر کی جگہ لے لی
ناگور ۔ 13 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) آر ایس ایس نے اپنے کارکنوں کے لئے ’’خاکی نیکرس‘‘ پر مبنی 91 سال قدیم ٹریڈ مارک ڈریس بدل دیا ہے اور بدلتے وقت کے ساتھ چلنے آر ایس ایس کی خواہش کے سبب سوئم سیوکوں کیلئے مقرر خاکی نیکرس برخاست کردیئے گئے ہیں اور ’’خاکی پتلون‘‘ ان کی جگہ لیں گے۔ آر ایس ایس کے اعلیٰ ترین فیصلہ ساز ادارہ ’’اکھل بھارتیہ پرتی ندھی سبھا‘‘ کے یہاں منعقدہ تین روزہ سالانہ اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا۔ آر ایس ایس کے سرکار سیواہا (جنرل سیکریٹری) سریش بھیا جی نے ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ’’ہم نے خاکی نیکرس کے بجائے بھورے پتلون استعمال کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ ہم ضدی یا ہٹ دھرم نہیں ہیں بلکہ وقت کے مطابق فیصلہ کیا کرتے ہیں‘‘۔ 1925ء میں آر ایس ایس کی تاسیس کے بعد سے ڈھیلی ڈھالی خاکی چڈیاں، آر ایس ایس کیڈرس کا ٹریڈ مارک ڈریس تھیں۔ اس ڈریس کے دیگر اجزاء اگرچہ وقتاً فوقتاً بدلتے رہے لیکن خاکی چڈیاں کسی تبدیلی کے بغیر تاحال برقرار تھیں۔ ابتداء سے 1940ء تک خاکی شرٹس اور نیکرس آر ایس ایس کا ٹریڈ مارک یونیفارم تھا۔ بعدازاں خاکی نیکرس کے ساتھ سفید شرٹس متعارف کئے گئے تھے۔ 1973ء میں چمڑے کے جوتوں کی جگہ لانگ بوٹس نے لی۔ بعدازاں ریگزین کے جوتے متعارف کئے گئے۔ جوشی نے اس کو ایک بڑی تبدیلی قرار دیا اور کہا کہ دور حاضر کی سماجی زندگی میں پتلون ایک باضابطہ اور باقاعدہ لباس ہے جس کے مطابق ہم نے یہ فیصلہ کیا ہے۔آر ایس ایس لیڈر نے مختلف سوالات پر جواب دیا کہ ’’ہم نے بھورے پتلون کے انتخاب کا فیصلہ کیا اگرچہ اس کی کوئی مخصوص وجہ نہیں ہے لیکن ہم نے اپنے طور پر یہ فیصلہ کیا ہے، کیونکہ یہ عام طور پر ہر جگہ دستیاب رہتا ہے اور دیکھنے میں اچھا معلوم ہوتا ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT