Friday , October 20 2017
Home / Top Stories / آر بی آئی کا سرکاری بینکس اور ملازمین کے ساتھ امتیازی سلوک

آر بی آئی کا سرکاری بینکس اور ملازمین کے ساتھ امتیازی سلوک

تلنگانہ و اے پی بینک ایمپلائز فیڈریشن کا ہڑتال کرنے کا انتباہ
حیدرآباد۔25نومبر(سیاست نیوز)تلنگانہ اور آندھرا پردیش بینک ایمپلائز فیڈریشن نے نوٹوں کی تنسیخ کے بعد بینک ملازمین کو درپیش مسائل سے کنارہ کشی کا حکومت پر الزام عائد کرتے ہوئے کہاکہ اگر زائد مقدار میںکرنسی کی فراہمی میں آر بی آئی اگر ناکام رہتی ہے تو ہم ہڑتال پر جانے کے لئے مجبور ہوجائیں گے۔ آج یہاں نیو پریس کلب سوماجی گوڑ میںمنعقدہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے فیڈریشن کے اسٹیٹ سکریٹری بی ایس رام بابو نے میڈیا کو بتایا کہ آر بی آئی سرکاری بینکوں اور اس کے ملازمین کے ساتھ امتیازی سلوک کررہا ہے۔ انہوں نے سرکاری بینکوں کے مقابلے پرائیوٹ بینکوں میں زیادہ رقم فراہم کرنے کا بھی انہو ںنے آر بی آئی پر الزام عائد کیا ۔ بی ایس رام بابو نے مزید کہاکہ سرکاری بینک نقدی کی کمی کے بورڈ چسپاں کرنے پر مجبور ہیں اور اس کے صارفین بینک عملے پر برہمی کا اظہار کررہے ہیںتودوسری جانب خانگی بینکوں میں بناء کسی قطار کے لوگ پرانے نوٹ آسانی کے ساتھ جمع کررہے ہیں اور نئے کرنسی نوٹ حاصل کررہے ہیں۔انہوں نے آر بی آئی سے وضاحت طلب کی ہے کہ پچھلے پندرہ دنوں میں آر بی آئی نے نئے نوٹ کتنے مقدار میں پرنٹ کروائی اور کتنی رقم کی تقسیم عمل میں آئی ہے۔انہوں نے کہاکہ اسٹیٹ بینک آف حیدرآباد اور آندھرا بینک کا تلنگانہ میںبڑا نٹ ورک ہے مگر نقدی کی کمی کے سبب یہاں پر کام ٹھپ اور مذکورہ بینک کے صارفین عملے پر برہم ہیں۔ انہو ںنے وضاحت میںتاخیر پر آر بی آئی کے خلاف احتجاج کا بھی انتباہ دیا ہے۔ انہوں نے کہاکہ بینک شعبہ کو مکمل خانگیانہ بنانے کے لئے موقع کا فائدہ اٹھاتے ہوئے آر بی آئی اور مرکزی حکومت خانگی بینکوںکی اہمیت میںاضافے کی کوشش کررہی ہیں۔انہوں نے کہاکہ آر بی آئی نے آندھرا کو اب تک چار لاکھ کروڑ روپئے کی نئی کرنسی فراہم کی جبکہ تلنگانہ میںاب تک صرف 4ہزار کروڑ ہی دئے ۔ انہوں نے کوآپرٹیو بینک کو بند کرنے کے اقدامات کی مذمت کی اور کہاکہ کوآپرٹیو بینک اور سرکاری بینکوں میں ایک بڑا اشتراک تھا جس کی وجہہ سے دیہی علاقو ںکی عوام تک پیسے آسانی کے ساتھ پہنچاتا تھا مگر آر بی آئی نے کوآپرٹیو بینکوں پر امتناع عائد کردیا جس کی وجہہ سے دیہی علاقوں کے عوام بالخصوص کسان پریشان حال ہیں۔آر سریکانت ریڈی صدر فیڈریشن‘ رویندر ناتھ ورکنگ پریسڈنٹ او ردیگر بھی اس موقع پر موجود تھے۔

TOPPOPULARRECENT