Thursday , August 24 2017
Home / شہر کی خبریں / آر ٹی سی کو بند کرنے کی دھمکی کی سخت مذمت

آر ٹی سی کو بند کرنے کی دھمکی کی سخت مذمت

چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر کے بیان پر محمد علی شبیر کا ردعمل
حیدرآباد ۔ 17 ۔ جون : ( سیاست نیوز ) : قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر نے چیف منسٹر کے سی آر کی جانب سے آر ٹی سی کو بند کردینے کی دھمکی دینے کی سخت مذمت کرتے ہوئے تلنگانہ تحریک میں اہم رول ادا کرنے والے 50 ہزار آر ٹی سی ایمپلائز کی توہین کرنے کا الزام عائد کیا ۔ آج گاندھی بھون میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر محمد علی شبیر نے کہا کہ تلنگانہ تحریک میں آر ٹی سی ایمپلائز کی 60 روزہ ہڑتال ناقابل فراموش ہے ۔ جس کو ہرگز نظر انداز نہیں کیا جاسکتا ۔ اس مسئلہ پر آر ٹی سی ایمپلائز کی جانب سے کوئی احتجاج مہم کی حکمت عملی تیار کی جاتی ہے تو کانگریس پارٹی اس کی بھر پور تائید کرے گی ۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل نے چھتیس گڑھ سے کئے گئے برقی معاہدے کو 10 ہزار کروڑ روپئے کا نقصان قرار دیتے ہوئے فوری معاہدے کو منسوخ کردینے کا ٹی آر ایس حکومت سے مطالبہ کیا یا قیمتوں پر نظر ثانی کرنے کا مشورہ دیا ۔ مسٹر محمد علی شبیر نے حیدرآباد میں چیف منسٹر تلنگانہ کی جانب سے 291 میٹر لمبا لہرایا گیا قومی پرچم پھٹ جانے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے مرکزی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ قومی پرچم کی توہین کرنے والے چیف منسٹر تلنگانہ اور صلاح دینے والے عملے کے خلاف سخت کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا ۔ ضلع رنگاریڈی کے ضلع پریشد اجلاس میں ایک عہدیدار کی شراب نوشی کر کے شرکت کرنے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ آمدنی میں اضافہ کرنے کے لیے شراب کی فروخت کو عام کردیا گیا ہے ۔۔

TOPPOPULARRECENT