Friday , August 18 2017
Home / ہندوستان / آسام بوڈو نے 1132 ایکڑ اراضی رام دیو کو الاٹ کردی

آسام بوڈو نے 1132 ایکڑ اراضی رام دیو کو الاٹ کردی

گوہاٹی ۔ 26 اگست (سیاست ڈاٹ کام) آسام میں خودمختار قبائیلی کونسل نے غیراستعمال شدہ زرعی اراضی کو بابا رام دیو کے پتانجلی ٹرسٹ کے حوالے کردیا۔ بنگلہ دیش کے غیرقانونی مسلم تارکین وطن کی جانب سے اس اراضی پر قبضہ کو روکنے کیلئے بوڈولینڈ کے ارکان نے یہ اقدام کیا ہے۔ آسام کے ضلع چیرانگ میں 1,132.5 ایکڑ اراضی اس سال کے اوائل میں بوڈو لینڈ ٹریٹوریل کونسل نے بابا رام دیو کے ٹرسٹ کو دیدی۔ اس فیصلہ کے خلاف کئی گروپس اور تنظیموں نے احتجاج کیا تھا۔ آل بوڈو اسٹوڈنٹس یونین نے یہ اراضی رام دیو ٹرسٹ کو دینے کی مخالفت کی ہے۔ بوڈولینڈٹریٹوریل علاقہ کے عوام اس اراضی پر سرکاری ادارہ قائم کرنے کا مطالبہ کررہے ہیں مگر کونسل نے رام دیو کے ٹرسٹ کو حوالہ کردیا۔ آل بوڈو اسٹوڈنٹس یونین کے صدر پرمود بودو نے گوہاٹی میں اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ رام دیو کو الاٹ کردہ اراضی میں بوڈوس سے حاصل کردہ اراضی کے علاوہ سرکاری پلاٹس بھی شامل ہیںجبکہ ان پلاٹس کے مالکین اپنی اراضی بابا رام دیو کو نہیں دینا چاہتے تھے۔ بنگلہ دیش غیرقانونی تارکین وطن کو روکنے کیلئے ہر جانب سے کوشش کی جارہی ہے۔ ریاست میں بی جے پی کے اقتدار پر آنے کے بعد بنگلہ دیش سے متصل ہندوستانی سرحدوں پر بھی چوکسی اختیار کی گئی ہے۔ حال ہی میں بوڈو لینڈ کے قائدین نے بنگلہ دیش کے تارکین وطن کی جانب سے اراضیات پر ناجائز قبضوں کا مسئلہ اٹھایاتھا۔ آسام آل بوڈو اسٹوڈنٹس یونین نے اس اراضی کو دوبارہ واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔ یہ اراضی بابا رام دیو کے ٹرسٹ کو حوالے کرنے کا فیصلہ غلط ہے۔

TOPPOPULARRECENT