Monday , September 25 2017
Home / ہندوستان / آسام کے سینئر وزیر کے مکان پر مرکزی ٹیم کا دھاوا

آسام کے سینئر وزیر کے مکان پر مرکزی ٹیم کا دھاوا

کانگریس اور رقیب الحسن کورسوا کرنے کی سازش۔ چیف منسٹر کا الزام
گوہاٹی۔/17مارچ، ( سیاست ڈاٹ کام ) چیف منسٹر آسام ترون گوگوئی نے آج یہ الزام عائد کیا ہے کہ ریاستی وزیر رقیب الحسن کی قیامگاہ پر انتخابی مصارف کے مبصرین اور انکم ٹیکس کی ٹیم کے دھاوے سیاسی محرکات پر مبنی ہیں جس کا مقصد کانگریس پارٹی اور اس کے لیڈروں کو رسوا کرنا ہے۔ مسٹر ترون گوگوئی نے آج میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ حسین کے مکان پر دھاوے سے اپوزیشن کے خلاف حکومت کا رویہ ظاہر ہوتا ہے اور پس پردہ سیاسی محرکات بے نقاب ہوگئے ہیں۔ چیف منسٹر نے کہا کہ رقیب الحسن نہ صرف سینئر وزیر ہیںبلکہ پارٹی اور اقلیتوں کے سرکردہ قائد بھی ہیں جن کے مکان کی تلاشی لینے کا مقصد انہیں اور پارٹی کو رسوا کرنا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ مرکزی حکومت کی بیجا کارروائی کی نہ صرف مذمت کی جائے گی بلکہ مناسب اتھاریٹیز سے احتجاج بھی کیا جائے گا۔ دریں اثناء وزیر زراعت رقیب الحسن نے آج بتایا کہ مرکزی ٹیم کے عہدیدار وں نے کل یہ دھاوے کئے تھے یہ اطلاع دی ہے کہ ان کی اہلیہ کے خلاف شکایت پر یہ کارروائی کی گئی۔ جس پر یہ سوال کیا گیا کہ میری اہلیہ کوئی سیاسی لیڈر نہیں ہے پھر یہ دھاوے کیوں کئے جارہے ہیں۔ اس کے باوجود ہم نے تلاشی کارروائی میں تعاون کیا۔ لیکن کوئی شئے دستیاب نہیں ہوئی۔ مسٹر حسین نے بتایا کہ یہ پورا قصہ سیاسی سازش کا نتیجہ ہے اور میرے ایک سابق دوست جو کہ حال ہی میں بی جے پی میں شامل ہوگئے ہیں مجھے اور میری پارٹی کو رسوا کرنے کیلئے یہ دھاوے کروائے ہیں۔ انہوں نے سیاسی مقاصد کیلئے سرکاری مشنری کے بیجا استعمال کی مذمت کی۔

TOPPOPULARRECENT