Thursday , October 19 2017
Home / کھیل کی خبریں / آسٹریلیا کے خلاف نیوزی لینڈ کا جارحانہ مظاہرہ

آسٹریلیا کے خلاف نیوزی لینڈ کا جارحانہ مظاہرہ

تیسرے دن راس ٹیلر 235 رنز پر ناٹ آؤٹ، کین ولیمس کی 12 ویں سنچری کا ریکارڈ میزبان ٹیم کو 49 رنز کی سبقت
پرتھ۔ 15 نومبر (سیاست ڈاٹ کام) آسٹریلیا کے خلاف دوسرے ٹسٹ میچ کے تیسرے دن نیوزی لینڈ کے بیٹسمین 3 ولیمسن اور راس ٹیلر نے انتہائی جارحانہ بیٹنگ کی۔ اتوار کے کھیل کے دوران گیند پر بیٹسمین کا غلبہ رہا۔ آسٹریلیا کے 559 رنز ڈیکلیر کے جواب میں نیوزی لینڈ کی ٹیم آج کھیل کے اختتام تک 510 رنز کے اسکور پر پہونچ گئی جس کے باوجود ہنوز صرف 49 رنز سے پیچھے ہے۔ نیوزی لینڈ کے راس ٹیلر نے غیرمعمولی طور پر جارحانہ کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے نہ صرف اپنی ڈبل سنچری مکمل کی بلکہ کیریئر کا سب سے زیادہ انفرادی اسکور 235 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔ ان کے ساتھ مارک کریگ 7 رنز پر کھیل رہے ہیں۔ نیوزی لینڈ کے کین ولیمسن آج اپنے کیریئر کی 12 ویں ٹسٹ سنچری بناتے ہوئے سرکردہ بیٹسمین میں شامل ہوگئے اور راس ٹیلر نے ڈبل سنچری مکمل کرلی۔  واکا گراؤنڈس پر آسٹریلیا کے خلاف دوسرے ٹسٹ میچ کے تیسرے دن کین اور راس ٹیلر نے دو سنچریز بناتے ہوئے اپنی ٹیم کا موقف مستحکم کرلیا، لیکن کین اور ٹیلر کی جارحانہ بیٹنگ کے پیش نظر یہ توقع کی جارہی ہے کہ نیوزی لینڈ کی ٹیم کم سے کم اس میچ کو بچانے میں کامیاب ہوجائے گی۔ رواں سیریز کے دو میچوں میں کین ولیمسن کی یہ دوسری سنچری تھی جو 166 رنز بناکر غلط ثابت کھیلتے ہوئے ہوش ہیزل ووڈ کی گیند پر مچل جانسن کے ہاتھوں کیچ آؤٹ ہوگئے۔ ولیمسن اور ٹیلر نے اپنی ٹیم کیلئے 256 رنز جوڑتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف نیوزی لینڈ بیٹسمین کی رفاقت کا ایک نیا ریکارڈ بنایا۔ ٹیلر 165 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔ ولیمسن نے 390 منٹ کے کھیل میں 249 گیندوں کا سامنا کرتے ہوئے 24 چوکوں کی مدد سے 166 رنز بنایا۔ 25 سالہ ولیمسن نے آسٹریلیا کے خلاف گیا اسٹیڈیم میں کھیلے گئے پہلے ٹسٹ میچ کی دو اننگز میں بالترتیب 140 اور 59 رنز بنایا تھا اور پرتھ میں بھی اپنا جارحانہ فارم برقرار رکھا۔ ولیمسن کی یہ 12 ویں ٹسٹ سنچری تھی اور 25 سال کی عمر میں اتنے ہی میچوں میں 12 یا اس سے زائد سنچریاں بنانے والے دیگر تین کھلاڑیوں میں سچن ٹنڈولکر (16)، ڈان براڈمین (13) اور الاسٹر کک (12) شامل ہیں۔ ولیمسن نے اپنے گزشتہ 7 کے منجملہ پانچ میچوں میں پاکستان، سری لنکا، انگلینڈ اور آسٹریلیا کے خلاف سنچریاں بنایا تھا اور اس موت کے دوران 111.80 رن ریٹ پر 1118 رن بنائے گئے تھے۔

TOPPOPULARRECENT