Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / آشا ورکرس کیساتھ حکومت کے جابرانہ رویہ کی مذمت

آشا ورکرس کیساتھ حکومت کے جابرانہ رویہ کی مذمت

ہڑتالی خاتون ورکرس کے مسائل حل کرنے ٹی آر ایس حکومت سے سی پی آئی کا مطالبہ
حیدرآباد۔ 13 ڈسمبر (این ایس ایس) ریاست تلنگانہ کے مختلف مقامات پر ہڑتال کرنے والے آشا ورکرس کے ساتھ زیادتی اور ان کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے تلنگانہ اسٹیٹ سی پی آئی صدر سی وینکٹ ریڈی نے آج مطالبہ کیا کہ ٹی آر ایس حکومت ہڑتالی خاتون ورکرس کے مسائل کو حل کرنے کے اقدامات کرے اور ان کے یونین قائدین کے ساتھ بات چیت کی جائے اور اگر ضروری ہو تو اس مسئلہ کو مرکزی حکومت سے رجوع کرے۔ ایک بیان میں اسٹیٹ سی پی آئی کے صدر نے اس بات پر افسوس کا اظہار کیا کہ گزشتہ 100 دن سے کئے جارہے آشا ورکرس کے ایجی ٹیشن پر ریاستی اور مرکزی حکومتوں کی جانب سے کوئی توجہ نہیں دی گئی۔ انہوں نے کہا کہ دونوں حکومتیں نہ صرف خاموش تماشائی بنی ہوئی ہیں بلکہ 25,000 آشا ورکرس کے ایجی ٹیشن کو پولیس فورس سے دبانے کی بھی کوشش کی جارہی ہے۔ سی پی آئی قائد نے کہا کہ آشا ورکرس نے ان کی تنخواہوں میں اضافہ اور انہیں سرکاری ملازمین تسلیم کرنے کیلئے حکومت پر دباؤ ڈالنے اتوار کو پدیاتراؤں کا آغاز کیا جبکہ ریاستی حکومت نے ان کی گرفتاری کیلئے پولیس کو تعینات کیا اور لاٹھیوں سے انہیں ڈرایا گیا۔ انہوں نے کہا کہ اس طرح کی بربریت انتہائی قابل مذمت ہے۔

TOPPOPULARRECENT