Wednesday , August 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / آمد رسولؐ کے بعد ظلم و ستم کا خاتمہ ، عدل و انصاف کا بول بالا

آمد رسولؐ کے بعد ظلم و ستم کا خاتمہ ، عدل و انصاف کا بول بالا

بیدر۔11جنوری(سیاست ڈسٹرکٹ نیوز)آستانہ قادریہ بگدل شریف میں پیران طریقت ڈاکٹر الحاج خلیفہ شاہ ادریس احمد قادری سجادہ نشین کی نگرانی میں آثار موئے مبارک نبی کریمؐ و غلا ف مبارک حضور سیدنا غوث الاعظم دستگیر محبوب سبحانی ؒ کی زیارت بصد عقیدت و احترام کے ساتھ کروائی گئی ۔ ہزاروں کی تعداد میں عاشقان رسول اللہ ﷺ فیوض و برکات سے مستفیض ہوئے۔بعد ازاں محفل نعت و حلقہ ذکر کا انعقاد عمل میں آیا۔ جناب ڈاکٹر شاہ خلیفہ ادریس احمد قادری نے درس تصوف دیتے ہوئے پر اثر خطاب کیا ۔اس موقع پر منعقدہ جلسہ جشن عید میلاد النبی ؐ و عظمت اولیاء اللہ کو مخاطب کرتے ہوئے نوجوان عالم دین مولانا محمد فیروز خاں نظامی کامل الفقہ جامعہ نظامیہ حیدرآباد نے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے تمام کائنات کو پیارے محبوب کے نور سے روشن و منور فرمایا ہے اور اسی نور کی روشنی میں ہم کو اُسوۂ حسنہ ﷺ پرعمل کرنے کی ضرورت ہے ۔ اللہ نے کسی نبی کو کچھ معجزے اور کسی کچھ معجزے دئے لیکن رسول مقبول ؐ کو سرتاپا معجزہ ہی معجزہ بناکر بندوں کی ہدایت کیلئے بھیجا ۔ مولا نا فیروز نظامی نے کہا نعت رسولؐ کسی بندے کی ایجاد کا نام نہیں ہے بلکہ اللہ خود قرآن مجید کو نعت بناکر نازل فرمایا ہے۔ اولیاء اللہ کو نہ کبھی ڈر اور نہ غم ہوتاہے اور ان کی بارگاہوں میں ہمیشہ امن و اتحاد ،پیار و محبت کا درس دیا جاتاہے۔ممتاز عالم دین مولانا محمد عبدالقدوس حیدرآباد نے کہا کہ حضورؐ دنیا میں تشریف لاتے ہی کعبہ تعظیم ًسے جھک گیا اور کعبہ میں موجود 360بت منہ کے بل گر پڑے ۔آپؐ کے دنیا میں تشریف لانے کے بعد عورت کو عورت کا درجہ ملا، انسانیت کو انسانیت ملی، آپؐ ایک ایسے وقت تشریف لائے جبکہ ہر طرف بت پرستی عام تھی لڑکیاں زندہ دفن کی جاتی تھیں۔مولانا نے کہا صحابہ کرام حضورﷺ سے دریافت فرماتے یارسول اللہ ؐ آپ ہر پیر کو روزہ رکھتے ہیں آپؐ نے فرمایا میری پیر ہی کے دن میلادپاک ہوئی اور مجھ پر قرآن نازل ہونا شروع ہوا ۔اُس زمانے کے دستور کے مطابق یمن سے قافلے آتے اور بچوں کو گود لیتے آپ ؐ کی دنیا میں آمد کے موقع پر بھی یمن سے 12اُونٹوں کا قافلہ آیا اوراس قافلے میں سب سے پیچھے بی بی داعی حلیمہ کی اُونٹنی تھی جب آقائے دو جہاں اُونٹنی پر سوار ہوتے اُونٹنی صحت مند اور سارے قافلے سے آگے ہوجاتی ہے ۔ ابو البشر حضرت سید نا آدم نبینا ؑکو رب العزت نے ایک لاکھ چوبیس ہزار زبانوں پر عبور عطافرمایا تھا۔ حضرت آدم ؑ کا مہر مبارک آپ ؐ پر 11مرتبہ درود شریف پڑھنے کے بعد ادا ہوگیا۔مولانا محمد عبدالحمید رحمانی صدر کل ہند تنظیم ا صلاح معاشرہ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آمد رسول ﷺ کے بعد جہالت کی تاریکی چھٹ گئی اور سارے عالم میں علم کی روشنی کا بول بالا ہوا ۔ سیرت رسول ﷺ پر عمل کرتے ہوئے اپنی زندگی کو روشن اور تابناک بنانے کی تلقین کی ۔ مولانا پیر اکبر محی الدین قادری ، محمد جنید نظامی ، محمد عفان نظامی بحیثیت مہمان خصوصی مو جود تھے ۔قرأت کلام پاک ، حمد کے بعد سید صاحب ، مولانا شاہ عبدالوہاب قادری نظامی ،انیل کمار چوہان حیدرآباداور دیگر نعت خواہوں نے نعت رسولؐ سنانے کی سعادت حاصل کی۔ جناب لئیق احمد قادری ، مونی میمن ایاز میمن، جاوید پٹیل،جیلانی، افتخار انجنئیر سولاپور ، حاجی عبدالرزاق ،انصارپٹیل، اسلم قاضی راجستھان ممبئی، مہمان علمائے مشائخین عظام ،مریدین و معتقدین معززین کی خلیفہ شاہ ادریس احمد قادری سجادہ نشین نے شال و گلپوشی فرمائی ۔قبل از نماز فجر سلام فاتحہ اور سجادہ نشین صاحب کی دعائے سلامتی کے بعد روحانی تقریب تکمیل پذیر ہوئی۔

TOPPOPULARRECENT