Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / آمرانہ و غلط حکمرانی سے ریاست کا مالی موقف انتہائی کمزور

آمرانہ و غلط حکمرانی سے ریاست کا مالی موقف انتہائی کمزور

دواخانہ عثمانیہ کے انہدام کی باتیں پاگل پن ۔ تلگودیشم لیڈر پرتاپ ریڈی کا بیان

حیدرآباد۔ 2 اگست (سیاست نیوز) تلنگانہ تلگو دیشم پارٹی نے تلنگانہ حکومت پر صرف زبانی باتوں اور بڑے اعلانات کے ذریعہ عوام کو خوش کرنے کا الزام عائد کیا اور کہا کہ تلنگانہ میں درحقیقت آمرانہ و من مانی کرنے والی حکومت پائی جاتی ہے۔ اخباری نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے مسٹر وی پرتاپ ریڈی ترجمان تلگو دیشم نے یہ بات کہی اور بتایا کہ تلنگانہ میں آمرانہ و غلط حکمرانی کی وجہ سے عوام کو مشکلات سے دوچار ہونا پڑ رہا ہے۔ انہوں نے چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کے طرز عمل کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا اور کہا کہ تلنگانہ حکومت جوکہ فاضل آمدنی والی ریاست تھی ، بغیر سوچے سمجھے اور من مانی انداز میں اعلانات کرکے رقومات کی اجرائی سے آج ریاست کا مالی موقف کمزور ہونے کی وجہ سے ریاست کا خزانہ خالی ہوچکا ہے۔ پرتاپ ریڈی نے حکومت تلنگانہ کی ابتر کارکردگی پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایرہ گڈہ ہاسپٹل کو وقارآباد منتقل کرنے کے اعلان پر عوای برہمی کو دیکھتے ہوئے چندر شیکھر راؤ خاموشی اختیار کرلی اور ایراگڈہ ہاسپٹل میں سیکریٹریٹ کی منتقلی کے اعلانات پر چندر شیکھر راؤ کو عوامی مخالفت کے باعث بے عزتی دوچار ہونا پڑا اور اب چندر شیکھر راؤ عثمانیہ دواخانہ کے مریضوں کو دیگر ہاسپٹلس میں منتقل کرکے عثمانیہ دواخانہ کی موجودہ عمارت کو منہدم کرنے کی پاگل پن کی باتیں کررہے ہیں۔ انہوں نے چیف منسٹر کے اعلانات کا مضحکہ اُڑایا اور کہا کہ کے سی آر نے عثمانیہ یونیورسٹی کی اراضیات حاصل کرکے غریبوں کیلئے امکنہ جات تعمیر کرنے کا اعلان کیا لیکن طلبا کے احتجاج کی وجہ سے انہیں خاموشی اختیار کرنے پر مجبور ہونا پڑا۔ تلگو دیشم ترجمان نے کہا کہ چیف منسٹر اپنی آمرانہ ذہنیت کے ذریعہ کسی سوجھ بوجھ کے بغیر من مانی اعلانات کررہے ہیں اور عملی اقدامات کرنے میں بالکلیہ طور پر ناکام چیف منسٹر ثابت ہورہے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT