Tuesday , October 17 2017
Home / شہر کی خبریں / آنجہانی راجیو گاندھی کی خدمات کو خراج

آنجہانی راجیو گاندھی کی خدمات کو خراج

ہائی ٹیک سٹی کو راجیو گاندھی کے نام سے معنون کرنے کا مطالبہ، یوم پیدائش تقریب، وی ہنمنت راؤ کا خطاب
حیدرآباد ۔ 20 اگست (سیاست نیوز) سکریٹری اے آئی سی سی و سابق رکن راجیہ سبھا مسٹر وی ہنمنت راؤ نے آنجہانی راجیو گاندھی کی خدمات کو ناقابل فراموش قرار دیتے ہوئے ہائی ٹیک سٹی کو راجیو گاندھی کے نام سے موسوم کرنے کا مطالبہ کیا۔ اس موقع پر صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی ورکنگ پریسیڈنٹ، مسٹر ملوبٹی وکرامارک قائد اپوزیشن تلنگانہ، قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر صدر تلنگانہ پردیش کانگریس اقلیت ڈپارٹمنٹ مسٹر محمد خواجہ فخرالدین کے علاوہ دوسرے موجود تھے۔ سدبھاونا یاترا منعقد کرنے کے بعد منعقدہ پروگرام سے خطاب کرتے ہوئے مسٹر وی ہنمنت راؤ نے راجیو گاندھی کی ملک کیلئے خدمات پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کہ ملک میں ٹیکنالوجی کا نیٹ ورک راجیو گاندھی کی مرہون منت ہے۔ ایسے عظیم قائد کو خراج عقیدت پیش کرنے کیلئے ہائی ٹیک سٹی کو راجیو گاندھی کے نام سے موسوم کرنے کا مشورہ دیا۔ صدر تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی کیپٹن اتم کمار ریڈی نے کہا کہ ملک میں قومی یکجہتی، غریب عوام کی خوشحالی اور ملک کی ترقی کیلئے آنجہانی راجیو گاندھی نے جو خدمات انجام دی ہے وہ نوجوان نسل کیلئے مشعل راہ ہے۔ انہوں نے نوجوانوں کو 18 سال میں ووٹ دینے کا اختیار دیا۔ مرکز سے دیہی سطح تک فنڈز کی منتقلی کیلئے اقدامات کئے، سماج کے تمام طبقات کے ساتھ انصاف کیا۔ انفارمیشن ٹیکنالوجی کو ہندوستان میں متعارف کراتے ہوئے روزگار کے بڑے پیمانے پر مواقع فراہم کئے۔ قائد اپوزیشن تلنگانہ قانون ساز کونسل مسٹر محمد علی شبیر نے کہا کہ آنجہانی قائد نے ملک میں بڑے پیمانے پر اصلاحات لاتے ہوئے ترقی اور فلاح و بہبود کیلئے بڑے بڑے اقدامات کئے۔ آر ایس ایس اور بی جے پی نے ہمیشہ سیاسی فائدے کیلئے مذہب و ذات پات کا استعمال کیا۔ انہوں نے ہندوستان کی جدوجہد آزادی میں کانگریس کا کوئی رول نہ ہونے کا آر ایس ایس اور وزیراعظم نریندر مودی کی جانب سے الزام عائد کرنے کی سخت مذمت کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم اور آر ایس ایس نے تحریک آزادی میں کانگریس کا کوئی رول نہ ہونے کا ریمارکس کرتے ہوئے مجاہدین آزادی کی توہین کی ہے۔ انگریزوں سے لڑائی لڑتے ہوئے کانگریسیوں نے اپنی زندگیاں قربان کی ہے جبکہ سنگھ پریوار نے ایک خطرہ خون بھی نہیں بہایا ہے۔ مسٹر محمد علی شبیر نے کہا کہ آزادی کی تحریک میں مجاہدین آزادی بھگت سنگھ، چندرشیکھر راؤ اور اشفاق اللہ خان نے اپنی زندگیاں قربان کی ہے۔ ملک کی آزادی کے بعد قومی یکجہتی اور اتحاد کیلئے گاندھی جی، اندرا گاندھی اور راجیو گاندھی نے اپنی زندگیاں قربان کی ہے۔ آر ایس ایس نے 60 سال تک اپنے ہیڈکوارٹر پر یوم آزادی کے موقع پر قومی پرچم نہیں لہرایا۔ آج کانگریس قائدین کی حب الوطنی پر انگلیاں اٹھائی جارہی ہیں۔ انہوں نے وزیراعظم نریندر مودی اور آر ایس ایس کو کانگریس اور قوم سے معذرت خواہی کرنے کا مطالبہ کیا۔

TOPPOPULARRECENT