Sunday , July 23 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرائی حکمرانوں سے تلنگانہ کے طبی و تعلیمی شعبہ جات تباہ

آندھرائی حکمرانوں سے تلنگانہ کے طبی و تعلیمی شعبہ جات تباہ

ٹی آر ایس سے ترقی دینے کا عزم ، نیلوفر ہاسپٹل میں محمد محمود علی ، دتاتریہ اور لکشما ریڈی کا خطاب
حیدرآباد۔14نومبر(سیاست نیوز) حکومت تلنگانہ کی جانب سے ریاست کے طبی اور تعلیمی شعبہ جات میںدرکارا صلاحات کو روبعمل لانے والے اقدامات کا تذکرہ کرتے ہوئے نائب وزیراعلی تلنگانہ جناب محمد محمودعلی نے کہاکہ پچھلے ساٹھ سالوں میں غیرعلاقائی حکمرانوں نے تلنگانہ کے سرکاری طبی او رتعلیمی شعبہ جات کوتباہی کے دہانے پر پہنچادیا تھا مگر تشکیل تلنگانہ کے بعد نئی ریاست میں برسراقتدار آنے والی ٹی آر ایس پارٹی کے سربراہ اور تلنگانہ کے پہلے چیف منسٹرکے چندرشیکھر رائو نے اپنی تمام ترتوجہہ ریاست کے طبی او رتعلیمی نظام کو تبدیل کرنے میںلگادی۔ آج یہاں نیلوفر اسپتال میں نئے انٹینسیو کیئر بلاک کی افتتاحی تقریب کے موقع پر مہمان ِخصوصی کی حیثیت سے وہ مخاطب تھے۔یونین منسٹر بنڈارودتاتریہ‘ ریاستی وزیر صحت ڈاکٹر سی لکشما ریڈی‘وزیر سینما ٹو گرافی و کمرشیل ٹیکس سرینواس یادو‘ رکن پارلیمنٹ بھونگیر ڈاکٹر بھورا نرسیہ گوڑ‘کے علاوہ سپریڈنٹ اسپتال ڈاکٹرسریش کمار‘آر لالو پرساد اور دیگر بھی اس تقریب میں موجود تھے۔اپنے سلسلہ کو جاری رکھتے ہوئے جناب محمد محمودعلی نے کہاکہ نیلو فر تاریخی اہمیت کاحامل اسپتال ہے جہاں پر تلنگانہ کے علاوہ پڑوسی ریاست آندھرا ‘ کرناٹک اور مہارشٹرا سے بھی لوگ اپنے بچوں کا علاج کرانے کے لئے آتے ہیں۔ انہوںنے کہاکہ آصف جاہ صابع کے دور میںتعمیر اس اسپتال میںبچوں کا رجو ع ہونا ہی شفاء یابی کی ضمانت ہے۔ مذکورہ اسپتال کو بین الاقوامی شہرت حاصل ہے اور اس کی عظمت رفتہ کی بحالی کے لئے حکومت تلنگانہ نے سات کروڑ کی لاگت سے آئی سی بلاک کی نئی عمارت تعمیر کی ہے جو عصری سہولتو ں سے آراستہ اور حاملہ عورتوں او رنومولود بچوں کے لئے موثر علاج کی سہولتیںبھی یہاں پر موجود ہیں۔جناب محمد محمودعلی نے کہاکہ پرانے شہر میںبھی بہت جلد دس کروڑ کی لاگت سے دبیر پورہ دواخانہ کی تعمیر کا آغاز عمل میں آئے گا جس کے لئے میں نے اپنے ڈیولپمنٹ فنڈ سے ڈھائی کروڑ جاری کئے ہیں اور حکومت کی وزارت صحت نے ساڑھے سات کروڑ کی اجرائی عمل میںلائی ہے ۔ انہوں نے شفاء خانہ چارمینار میںعصری سہولتوں سے لیس لیبر روم کی تعمیر کا بھی حوالہ دیا او رکہاکہ شعبہ تعلیم اور شعبہ صحت کو موثر بنانے کے لئے چیف منسٹر کے چندرشیکھر رائو نے متعلقہ قائدین کو اس کی ذمہ داری تفویض کی ہے۔نیلوفر اسپتال کی نئے بلاک میںدرکار طبی عملے کا بھی بہت جلد تقرر عمل میں لانے کا تیقن دیا ۔ مرکزی وزیربنڈارو دتاتریہ نے سرکاری دواخانوں کے متعلق حکومت کے اقدامات کی ستائش کرتے ہوئے کہاکہ موجود ہ حالات میںلوگ نوٹوں کی طرف بھاگ رہے ہیںجبکہ نوٹ کبھی بھی آسکتے ہیں عوام کو چاہئے کہ وہ اپنی صحت پرتوجہہ دیں جو کسی وجہہ سے خراب ہوگئی توواپس نہیںمل سکے گی۔وزیرصحت سی لکشما ریڈی نے نیلوفر اسپتال انتظامیہ کو یقین دلایا کہ محکمہ صحت نئے بلاک میں درکار طبی عملے کا بہت جلد تقرر عمل میںلائے گاتاکہ عوام کود رپیش مشکلات کو دور کیاجاسکے۔ انہوں نے جنگی خطوط پر مذکورہ عمارت کی تعمیر کو نیلوفر اسپتال انتظامیہ کی کاوشوں کانتیجہ قراردیا ۔ انہوں نے کہاکہ عمارت میںتعمیر کے دوران محکمہ صحت کی جانب سے کوئی مداخلت نہیںکی گئی ۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے انتظامیہ پر تعمیر کا طریقہ اختیار کرنے کا فیصلہ چھوڑ دیاتھا۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT