Thursday , September 21 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھراپردیش اسمبلی کا بجٹ سیشن ، 10 مارچ کو عام و زرعی بجٹس

آندھراپردیش اسمبلی کا بجٹ سیشن ، 10 مارچ کو عام و زرعی بجٹس

حیدرآباد ۔ 5 مارچ (سیاست نیوز) آندھراپردیش قانون ساز اسمبلی کا 30 مارچ تک بجٹ سیشن منعقد ہوگا۔ 10 مارچ کو عام بجٹ اور زرعی بجٹ دونوں بجٹ پیش کئے جائیں گے۔ اسمبلی اجلاس کے ایجنڈے کی حکمت عملی تیار کرنے کیلئے آج اسپیکر اسمبلی کوڈیلا شیوا پرساد کی صدارت میں بزنس اڈوائزری کمیٹی کا اجلاس منعقد ہوا، جس میں 16 دن تک بجٹ سیشن کو مکمل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ بعدازاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ گورنمنٹ چیف وہپ کے سرینواسلو نے کہا کہ 10 مارچ کو عام بجٹ کے ساتھ زرعی بجٹ بھی پیش کیا جائے گا۔ گورنر کے خطبہ پر چیف منسٹر آندھراپردیش مسٹر این چندرا بابو نائیڈو 9 مارچ کو جواب دیں گے۔ بجٹ مباحث پر ریاستی وزیرفینانس وائی رام کرشنوڈو جواب دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ وقفہ سوالات اور وقفہ صفر کے بعد تحریک التواء نوٹس پیش کرنے کی اسپیکر اسمبلی نے تجویز پیش کی ہے۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کی جانب سے سینئر قائدین جے نہرو اور سریکانت ریڈی نے اجلاس میں شرکت کی اور 40 دن تک اسمبلی کا بجٹ سیشن منعقد کرنے کا مطالبہ کیا۔ اس کے علاوہ بجٹ سیشن میں مباحث کیلئے 25 اہم موضوعات پیش کئے۔ 40 دن تک اسمبلی سیشن چلانے کے مطالبہ کو حکمراں تلگودیشم نے قبول نہیں کیا۔ وائی ایس آر کانگریس پارٹی کے رکن اسمبلی نے کہاکہ حکومت عوامی مسائل سے راہ فرار اختیار کرنا چاہتی ہے۔ صرف دستوری فرائض کی انجام دہی کیلئے 16 دن کا سیشن منعقد کررہی ہے۔ زیادہ دن تک اسمبلی کا سیشن منعقد کرنے سے عوامی مسائل موضوع بحث بننے کے خوف سے اسمبلی کے بجٹ سیشن کو گھٹا دیا گیا ہے۔ باوجود اس کے وائی ایس آر کانگریس پارٹی اپوزیشن کا تعمیری رول ادا کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ قواعد کے تحت ہی اسمبلی میں وقفہ سوالات سے قبل ہی تحریک التواء نوٹس پیش کی جائے گی۔ بجٹ سیشن میں ہی وائی ایس آر کانگریس پارٹی حکومت کے خلاف تحریک عدم اعتماد نوٹس پیش کرے گی۔

TOPPOPULARRECENT