Tuesday , August 22 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش آبی تنازعہ حل کرنے تیار نہیں

آندھرا پردیش آبی تنازعہ حل کرنے تیار نہیں

پڑوسی ریاست کا ایک قطرہ پانی بھی استعمال نہیں کیا جائیگا: ہریش راو
حیدرآباد 5 مئی ( آئی این این ) ریاستی وزیر آبپاشی ٹی ہریش راؤ نے آج الزام عائد کیا کہ حکومت آندھرا پردیش دونوں ریاستوں کے مابین دریاؤں کے پانی کی تقسیم کے مسئلہ پر جاریہ تنازعہ کو ختم کرنے کی خواہشمند نہیں ہے ۔ میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے ہریش راؤ نے ادعا کیا کہ انہوں نے کئی مرتبہ فون پر اپنے آندھرائی ہم منصب دیوینینی اوما سے بات کرنے کی کوشش کی لیکن آندھرا کے وزیر انکے کالس کا جواب نہیں دے رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دیوینینی کو یہ خوف ہے کہ وہ اگر تلنگانہ سے بات کرتے ہیں تو آندھرا پردیش کا موقف بے نقاب ہوجائیگا ۔ ہریش راؤ نے کہا کہ تلنگانہ حکومت چاہتی ہے کہ بچاوت ٹریبونل ایوارڈ کے مطابق پانی کا استعمال کیا جائے ۔ انہوں نے کہا کہ اگر تلنگانہ میں تعمیر کئے جانے والے پراجیکٹس غیر قانونی ہیں تو آندھرا پردیش کو کہاں سپ آبپاشی پراجیکٹس کیلئے اجازت نامے حاصل ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جو پانی آندھرا پردیش کیلئے مختص کیا گیا ہے اس کا ایک قطرہ بھی تلنگانہ کی جانب سے استعمال نہیں کیا جائیگا ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ چیف منسٹر آندھرا پردیش چندرا بابو نائیڈو اور قائد اپوزیشن جگن موہن ریڈی تلنگانہ کے آبپاشی پراجیکٹس میں سیاسی فائدہ کیالئے رخنہ اندازی کر رہے ہیں۔ قبل ازیں ہریش راؤ نے وزیر زراعت پوچارم سرینواس ریڈی کے ساتھ بکنور منڈل ضلع نظام آباد میں مشن کاکتیہ کے کاموں کے دوسرے مرحلہ کا افتتاح انجام دیا ۔

TOPPOPULARRECENT