Monday , March 27 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش اسمبلی میں گورنر کے خطبہ پر تنقید

آندھرا پردیش اسمبلی میں گورنر کے خطبہ پر تنقید

حیدرآباد ۔ 7 ۔ مارچ : ( سیاست نیوز ) : صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی و قائد اپوزیشن مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی نے گورنر آندھرا پردیش مسٹر ای ایس ایل نرسمہن کے اسمبلی میں دئیے گئے خطبہ پر اپنی سخت برہمی کا اظہار کیا اور کہا کہ گورنر مسٹر نرسمہن نے چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو کے فراہم کردہ تحریری خطبہ کو ہی پڑھ کر سنادیا ۔ انہوں نے اپنی سخت تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ مسٹر نرسمہن سے چیف منسٹر مسٹر این چندرا بابو نائیڈو نے مکمل جھوٹ کہلوادیا ۔ جیسا کہ مسٹر چندرا بابو نائیڈو کے کہنے پر گورنر نے قومی شرح پیداوار کے مقابلہ میں ریاست آندھرا پردیش نے زائد شرح ترقی حاصل کرنے کا اظہار کر کے مکمل جھوٹ پر مبنی اپنا خطبہ دیا ۔ مسٹر جگن موہن ریڈی نے حکومت آندھرا پردیش کو حدف ملامت بناتے ہوئے کہا کہ راجدھانی میں پلاٹس کے مختص کیے جانے کا واقعہ انتہائی تعجب خیز و حیرتناک ہے ۔ کیوں کہ پلاٹس آلاٹ کرنے میں مسٹر چندرا بابو نائیڈو کے حامیوں و قریبی افراد کو ہی بہتر سے بہتر پلاٹس مختص ( آلاٹ ) کیے گئے ۔ صدر وائی ایس آر کانگریس پارٹی مسٹر وائی ایس جگن موہن ریڈی نے کہا کہ انتہائی اہمیت کے حامل و بہتر مالیتی پلاٹس صرف تلگو دیشم قائدین کو الاٹ کیے گئے ۔ انہوں نے دریافت کیا کہ کمرشیل زون میں پارکس کے قریب مسٹر پی کیشو اور ڈی نریندر کمار کو رہائشی پلاٹس کس طرح حاصل ہوئے ۔ مسٹر جگن موہن ریڈی نے الزام عائد کیا کہ اراضیات دینے والے کسانوں کے ساتھ تلگو دیشم حکومت نے غیر معمولی نا انصافی کی ہے ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT