Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش کو الیکٹرانکس مینوفیکچرنگ مرکزبنایا جائیگا

آندھرا پردیش کو الیکٹرانکس مینوفیکچرنگ مرکزبنایا جائیگا

بی ایس این ایل اب منافع بخش ادارہ میں تبدیل ، مرکزی وزیر روی شنکر پرساد کا بیان
وشاکھاپٹنم ۔ 18 فروری (پی ٹی آئی) مرکزی وزیر کمیونیکیشن و انفارمیشن ٹیکنالوجی روی شنکر پرساد نے آج کہا کہ آندھرا پردیش کو ایک بڑے الیکٹرانک مرکز کے طور پر فروغ دیا جائے گا۔ انہوں نے اس ضمن میں کئی منصوبوں کا اعلان کیا۔ انہوں نے بتایا کہ آندھراپردیش الیکٹرانک مینوفیکچرنگ مرکز ثابت ہوگا کیونکہ 4 الیکٹرانک یونٹس یہاں پہلے ہی منظور کئے جاچکے ہیں جبکہ پانچویں یونٹ کیلئے بھی عنقریب منظوری دی جائے گی۔ انہوں نے آج یہاں سوسائٹی فار اپلائیڈ مائیکرو ویو الیکٹرانکس انجینئرنگ اینڈ ریسرچ کا سنگ بنیاد رکھا۔ اس تنظیم کا ہیڈکوارٹر ممبئی میں ہے اور چینائی، کولکتہ، گوہاٹی و وشاکھاپٹنم میں چار دیگر مراکز کے ذریعہ یہ اپنی خدمات انجام دیتا ہے۔ اس ادارہ کی مستقل عمارت یہاں آنندپورم منڈل کے گمبھی رام ویلیج میں 15 ایکر احاطہ پر تعمیر کی جائے گی۔ روی شنکر پرساد نے کہا کہ چیف منسٹر آندھرا پردیش این چندرا بابو نائیڈو نے انفارمیشن ٹیکنالوجی اینڈ انویسٹمنٹ ریجن کو ریاست میں قائم کرنے کی خواہش کی ہے اور مرکزی حکومت اس تجویز پر غور کرے گی۔ انہوں نے بتایا کہ بھارت سنچارنگم لمیٹیڈ (بی ایس این ایل) 2004ء تک منافع بخش ادارہ تھا لیکن کانگریس زیراقتدار 10 سالہ حکومت میں یہ خسارہ سے دوچار ہوگیا۔ گزشتہ 17 ماہ کے دوران بی ایس این ایل نے دوبارہ منافع کمانا شروع کیا ہے اور اسے 672 کروڑ روپئے کا منافع ہوا ہے۔ روی شنکر پرساد نے ریاست میں نیشنل انفارمیٹکس سنٹر کے قیام کا بھی اعلان کیا۔

TOPPOPULARRECENT