Friday , September 22 2017
Home / شہر کی خبریں / آندھرا پردیش کیلئے مختص عمارتیں تلنگانہ کے حوالے کی جائیں ‘ کابینہ کی قرارداد

آندھرا پردیش کیلئے مختص عمارتیں تلنگانہ کے حوالے کی جائیں ‘ کابینہ کی قرارداد

لینگویج پنڈت و پی ای ٹی کی 3534 جائیدادوں کو اسکول اسسٹنٹس کی حیثیت سے ترقی ‘ خاتون ملازمین کو بچوں کی نگہداشت کیلئے  90 دن رخصت ۔ کابینہ کے اجلاس میں فیصلے
حیدرآباد /21 اکٹوبر ( سیاست نیوز ) تلنگانہ کابینہ نے حیدرآباد میں آندھراپردیش کیلئے مختص عمارتیں ‘اسمبلی ‘کونسل اور سکریٹریٹ بلاکس حکومت تلنگانہ کے حوالے کرنے کا گورنر سے مطالبہ کرتے ہوئے ایک قرارداد منظور کی ۔ خاتون ملازمین کو چائلڈ کیر لیو ( بچہ کی نگہداشت کیلئے رخصت ) 90 دن مختص کرتے ہوئے انہیں بچے کی عمر 18 سال ہونے تک 6 مرحلوں میں رخصت حاصل کرنے کی منظوری دی گئی ۔ لینگویج پنڈت اور پی ای ٹی کے 3534 جائیدادوں کو اسکولس اسسٹنٹس کی حیثیت سے ترقی دینے کا فیصلہ کیا گیا ۔ تین مسائل کا جائزہ لینے وزراء کی قیادت میں 3 علحدہ سب کمیٹیاں تشکیل دی گئیں ۔ چیف منسٹر چندر شیکھر راؤ کی صدارت میں آج سکریٹریٹ میں 4 گھنٹوں تک کابینہ کا اجلاس منعقد ہوا جس میں مختلف مسائل اور ترقیاتی کاموں اور فلاحی اسکیمات پر عمل آوری کا جائزہ لیا گیا کسانوں کے قرضہ جات معافی کی تیسری قسط فیس ری ایمبرسمنٹ اور آروگیہ شری کے بقایاجات اندرون ایک ماہ جاری کردینے کی چیف منسٹر کے سی آر نے چیف سکریٹری کو ہدایت دی ۔ بعد ازاں ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈپٹی چیف منسٹر کڈیم سری ہری نے یہ بات بتائی ۔ ریاستی وزراء این نرسمہا ریڈی ، ہریش راؤ ٹی سرینواس یادو اور ڈاکٹر لکشما ریڈی بھی موجود تھے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے کہا کہ ریاست کی تقسیم کے بعد علحدہ تلنگانہ میں شہر حیدرآباد کی دونوں تلگو ریاستوں کا 10 سال تک مشترکہ صدر مقام رکھا گیا ہے ۔ آندھراپردیش کیلئے سکریٹریٹ کے احاطے میں 4 بلاکس مختص کئے گئے اسمبلی اور کونسل کیلئے بھی عمارتیں مختص کی گئی ہیں تاہم آندھراپردیش کا نظم و نسق وجئے واڑہ منتقل ہوچکا ہے ۔ چیف منسٹر وزراء سکریٹری ہیڈ آف دی ڈپارٹمنٹس یہاں تک کہ پولیس کے اعلی عہدیدار وجئے واڑہ منتقل ہوچکے ہیں ۔ تلنگانہ کابینہ نے ایک قرارداد منظور کرکے گورنر سے مطالبہ کیا کہ وہ ان عمارتوں کو حکومت تلنگانہ کے حوالے کریں ۔ کڈیم سری ہری نے بتایا کہ چیف منسٹر آندھراپردیش چندرا بابو نائیڈو نے آج گورنر سے ملاقات کے بعد یہ اشارہ بھی دیا ہے کہ انہیں اس پر کوئی اعتراض نہیں ہے تاہم وہ کابینہ اجلاس میں اس پر غور کریں گے ۔ ذرائع سے پتہ چلا ہے کہ چیف منسٹر نے وزراء کو نئے سکریٹریٹ کے بارے میں تمام تفصیلات سے واقف کروایا ہے ۔ ڈپٹی چیف منسٹر نے بتایا کہ لمبے عرصے سے لنگویج پنڈت اور پی ای ٹی ٹیچرس انہیں ترقی دینے کا مطالبہ کر رہے ہیں ۔ آج کابینہ میں 2487 لنگویج پنڈت اور 1047 پی ای ٹی ٹیچرس کو اسکول اسسٹنٹس کی حیثیت سے ترقی دینے کی منظوری دی ہے ۔ سرکاری ملازمین خواتین کو چائلڈ کیر لیو منظور کی گئی ہے اور انہیں اختیار دیا گیا ہے کہ وہ بچے کی عمر 18 سال ہونے تک اس 90 دن کی رخت کو 6 مرحلوں میں استعمال کرسکتی ہیں ۔ لیکن بیک وقت صرف 15 دن رخصت لینے کی اجازت رہے گی ۔ اضلاع کی تنظیم جدید کا مثبت ردعمل دیکھنے کو مل رہا ہے ۔ سرکاری نظم و نسق عوام کی دہلیز پر پہونچ گیا ہے ۔ عوام کی خواہش پر تلنگانہ کے جملہ 31 اضلاع میں 6 اضلاع کے ناموں کو تبدیل کرنے کی منظوری دی گئی ہے ۔ کمرم بھیم آصف آباد ، یاداوری ، بھونگیر ، بھدرادری کتہ گوڑم جوگولامبا گدوال ، راجنا سرسلہ ، جئے شنکر بھوپال پلی کی حیثیت سے مانے جائیں گے ۔ مستقبل کی حکمت عملی تیار کرنے کیلئے وزیر آبپاشی ہریش راؤ کی صدارت میں کابینی سب کمیٹی تشکیل دینے کا فیصلہ کیا گیا ۔ یونیورسٹیز میں معیار تعلیم کو بلند کرنے مخلوعہ جائیدادوں پر تقررات و دیگر مسائل پر غور کرنے کڈیم سری ہری کی قیادت میں دوسری کابینی سب کمیٹی تشکیل دی گئی ہے ۔ مچھلیوں کی افزائش اور جانوروں کے نسل کو فروغ دینے کا جائزہ لینے کیلئے وزیر انیمل ہسبنڈری ٹی سرینواس یادو کی قیادت میں تیسری کابینی سب کمیٹی تشکیل دی گئی ۔

TOPPOPULARRECENT