Sunday , April 23 2017
Home / Top Stories / ’’آوارہ کتوں کو بھی جینے کا حق ہے‘‘ : سپریم کورٹ

’’آوارہ کتوں کو بھی جینے کا حق ہے‘‘ : سپریم کورٹ

نئی دہلی ۔ 17 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ’’آوارہ کتوں کو بھی جینے کا حق ہے‘‘۔ اس شدید ردعمل کا اظہار سپریم کورٹ نے اس وقت کیا جب ایک درخواست میں یہ استدعا کی گئی تھی کہ ملک بھر میں اس قسم کے تمام آوارہ کتوں کا خاتمہ کردیا جانا چاہئے۔ جسٹس دیپک مصرا اور جسٹس آر بھانومتی پر مشتمل بنچ نے اس تاثر کا اظہار کیا کہ ’’آوارہ کتوں کو تلف کرنے کی اگرچہ اجازت ضرور ہے لیکن اس معاملہ میں توازن اور مناسب طریقہ کار کی ضرورت بھی ہے۔ ایک درخواست گذار نے جب استدعا کی کہ ہندوستان بھر میں تمام آوارہ کتوں کو ختم کردیا جائے۔ بنچ نے کہا کہ ’’کوئی بھی تمام آوارہ کتوں کا مکمل طور پر خاتمہ نہیں کرسکتا۔ انہیں (آوارہ کتوں کو) بھی جینے کا حق ہے‘‘۔ ایڈیشنل سالیسٹر جنرل پنکی آنند نے عدالت عظمیٰ کے ان تاثرات کو قبول کرلیا اور کہا کہ آوارہ کتوں کو بھی جینے کا حق ہے اور اس ضمن میں مناسب توازن ہونا چاہئے‘‘۔ آوارہ کتوں کو تلف کرنے کے مسئلہ پر مختلف شہری ادارہ جات کی طرف سے منظورہ احکام سے متعلق مسائل پر درخواستوں پر عدالت عظمیٰ میں سماعت کی جارہی تھی۔ بالخصوص کیرالا اور ممبئی میں آوارہ کتوں کا مسئلہ سنگین نوعیت اختیار کر گیا ہے۔ بنچ نے کہا کہ کیرالا میں انسانی تشویش کے مسائل ہیں لیکن اس کیلئے تمام آوارہ کتوں کو ہلاک نہیں کیا جاسکتا۔ کسی کتے کے کاٹنے سے کوئی انسان فوت ہوسکتا ہے۔ یہ ایک اتفاقی حادثہ ہے جس کیلئے ہم یہ نہیں کہہ سکتے کہ تمام کتوں کو ہلاک کردیا جائے۔

 

ماؤسٹ بم دھماکے میں
کھوجی کتا ہلاک، تربیت کنندہ زخمی
لٹے ہار (جھارکھنڈ) ۔ /17 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ایک کھوجی کتا ہلاک اور اس کو تربیت دینے والا زخمی ہوگیا ۔ جبکہ ماؤسٹوں نے نکسلائیٹ زیراثر علاقہ لٹے ہار کے محلہ بوڑھا پتھر میں بم دھماکہ کیا ۔ ترقی یافتہ دھماکو آلہ سے کیا جانے والا دھماکہ فوجی پولیس اور کوبرا کی بٹالین کی تلاشی مہم کے دوران پیش آيا ۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT