Sunday , August 20 2017
Home / شہر کی خبریں / آوٹر رنگ روڈ کے اطراف ’ منی ٹاؤنس ‘ کی تعمیر کا منصوبہ

آوٹر رنگ روڈ کے اطراف ’ منی ٹاؤنس ‘ کی تعمیر کا منصوبہ

حیدرآباد۔ 14 فروری (سیاست نیوز) حکومت نے گریٹر حیدرآباد میں بڑھتے ٹریفک مسائل پر قابو پانے جواہر لال نہرو آوٹر رِنگ روڈ کے اطراف بعض منتخبہ علاقہ جات کو ’مٹی ٹاؤنس‘ بنانے کی تیاریاں کررہی ہے کیونکہ گریٹر حیدرآباد اور اس کے مضافاتی علاقوں کی مساویانہ انداز میں ترقی کو یقینی بنانے ڈیولپمنٹ سنٹرس کی تعمیر ناگزیر دکھائی دیتی ہے ۔ اس سلسلے میں سرکاری عہدیدار شہر سے دور ’ٹرانزٹ اورینٹیڈ گروتھ سنٹرس‘ کی تعمیر کیلئے اقدامات کا آغاز کرچکے ہیں ۔ ان اقدامات کے حصہ کے طور پر آوٹر رِنگ روڈ کے حدود میں 13 مختلف مقامات کو ’منی ٹاؤنس ‘کے طور پر ترقی دینے کا  منصوبہ حکومت نے تیار کرلیا ہے ۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ حالیہ دنوں میں پراجیکٹ کی پیشرفت کا جائزہ لینے چیف سیکریٹری نے اجلاس طلب کیا تھا اور عہدیداروں کو ہدایت دی کہ مذکورہ منصوبہ کو عملی جامہ پہنانے اقدامات کریں۔ چیف سیکریٹری کی ہدایت پر حیدرآباد میٹرو ڈیولپمنٹ اتھاریٹی کے عہدیداروں نے 13 منی ٹاؤنس کی تعمیر کیلئے درکار اراضیات کے حصول کیلئے اپنی نہ صرف توجہ مرکوز کی بلکہ جستجو کا آغاز کیا ۔ بتایا جاتا ہے کہ آوٹر رنگ روڈ حدود میں 13 اِنٹرچینج کے پاس مجوزہ 13 منی ٹاؤنس قائم کئے جائیں گے جس میں آدی بٹلہ، بونگلورو، گھٹکیسر، گنڈلہ پوچم پلی، کیسرا، کوکہ پیٹ، میڑچل، پٹن چیرو، پدا عنبرپیٹ، شاہ میر پیٹ، تیلاپور، توکو گوڑہ، تماپور شامل ہیں۔ ان منی ٹاؤنس کے قیام کی وجہ سے شہر میں ٹریفک دباؤ میں کمی واقع ہوگی بلکہ مقامی بیروزگار نوجوانوں کو روزگار کے مواقع حاصل ہوسکیں گے ۔ان منی ٹاؤنس کے قیام کیلئے درکار رقومات، بنیادی سہولتوں کے ساتھ عالمی معیار کی نوعیت کے مکانات بھی ان منی ٹاؤنس میں فراہم ہوسکیں گے۔

TOPPOPULARRECENT