Thursday , October 19 2017
Home / شہر کی خبریں / آوٹر رنگ روڈ کے قریب ٹیکنواور ڈسکوری سٹیز قائم کرنے کا فیصلہ

آوٹر رنگ روڈ کے قریب ٹیکنواور ڈسکوری سٹیز قائم کرنے کا فیصلہ

ایم ایم ڈی اے بورڈ کا اجلاس ، وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر کا خطاب
حیدرآباد ۔ 5 ۔ اکٹوبر : ( سیاست نیوز ) : شہر حیدرآباد کو گلوبل سٹی کے طرز پر ترقی دینے کے ساتھ ساتھ آوٹر رنگ روڈ کے قریب ٹیکنوسٹی ‘ اور ’ ڈسکوری سٹی ‘ کے نام سے مزید دو شہر بسانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر کی صدارت میں بیگم پیٹ کے میٹرو بھون میںمنعقدہ ایم ایم ڈی اے بورڈ کے اجلاس میں یہ فیصلہ لیا گیا ۔ اس موقع پر سکریٹری بلدی نظم و نسق نوین متل ، ایچ ایم ڈی اے کمشنر چرنجیلو ، جی ایچ ایم سی کے کمشنر جناردھن ریڈی کے علاوہ دوسرے محکمہ جات کے اعلیٰ عہدیدار موجود تھے ۔ شہر حیدرآباد کی تیز رفتار ترقی کے ساتھ شہریوں کو بنیادی سہولتیں اور مناسب انفراسٹرکچر قائم کرنے کا اجلاس میں جائزہ لیتے ہوئے گریٹر حیدرآباد کے حدود میں واقع آوٹر رنگ روڈ کے دونوں جانب بڑے بڑے انٹگریٹیڈ ٹاون شپ تعمیر کرنے سے اتفاق کرتے ہوئے پہلے مرحلے میں تیلاپور میں ’ ٹیکنو سٹی ‘ اور سری نگر میں ’ڈسکوری سٹی ‘ کے نام سے پبلک پرائیوٹ پارٹنر شپ ( پی پی پی ) کے تحت دو نئے شہر بسانے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ایچ ایم ڈی اے بورڈ کے اجلاس میں 42 موضوعات پر غور کیا گیا ۔ شہر حیدرآباد کو گلوبل سٹی کے طرز پر ترقی دینے کے لیے ضروری پراجکٹس کو فوری اثر کے ساتھ منظوری دی گئی ۔ موسیٰ ریور فرنٹ کے تحت مزید ایک کیلو میٹر تک اپل بھگیت بفر زون کو خوبصورت بنانے کا بھی فیصلہ کیا گیا ۔ بالانگر فلائی اوور تعمیر کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے حصول اراضیات کے اقدامات کرنے کی ہدایت دی گئی ۔ شہر کے چاروں طرف انٹر سٹی بس ٹرمینلس قائم کرنے کی حکمت عملی پر غور و خوص کیا گیا ۔ ایچ ایم ڈی اے لے آوٹ میں شامل ہونے سے رہ جانے والی چھوٹی چھوٹی اراضیات کو شامل کرنے شہریوں کے لیے قابل اعتراض ماسٹر پلان کو عصری بنانے کی منظوری دی گئی ۔ ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق کے ٹی آر نے مستقبل کو ذہن میں رکھتے ہوئے ماسٹر پلان میں پائی جانے والی خامیوں کو دور کرنے کی عہدیداروں کو ہدایت دی ۔ سکریٹری بلدی نظم و نسق نوین متل نے حصول اراضیات کے ذریعہ ترقیاتی کام انجام دینے کا تیقن دیا ۔ کمشنر چرنجیولو نے کہا کہ ایچ ایم ڈی اے میں فنڈز کی کوئی قلت نہیں ہے ۔ اجلاس میں ایس آر ڈی پی کے تحت بالا نگر کراس روڈ سے نرسا پور جنکشن تک 380 کروڑ کے مصارف سے فلائی اوور تعمیر کرنے کی منظوری دی گئی ۔ سنگاریڈی میونسپلٹی کے حدود میں سڑکوں کی تعمیرات و توسیع کے کاموں سنٹرل لائیٹنگ کے علاوہ دوسرے ترقیاتی کاموں کو منظوری دی گئی ۔ اپل میں 72 ایکڑ لے آوٹ کو ترقی دینے کی منظوری دی گئی ۔ موسیٰ ریور فرنٹ کے تحت اپل بھگیت میں مزید ایک کیلو میٹر تک خوبصورتی کے کاموں کو توسیع دینے سے اتفاق کیا گیا ۔ نکلس روڈ اور کوکٹ پلی آئی اینڈ ڈی کاموں کی منظوری دی گئی ۔ اننر رنگ روڈ میں میلار دیوپلی تا سری سیلم روڈ براہ لکشمی گوڑہ ، جل پلی ، مامڈی پلی پی 7 روڈ کے کاموں کو بھی منظوری دی گئی ۔ ( پی پی پی ) پراجکٹ کے تحت تیلاپور یں انٹگریٹیڈ ٹاون شپ ٹیکنو سٹی کے قیام کے لیے ڈی پی آر حوالے کرنے آوٹر کے قریب میں سری نگر کے پاس انٹگریٹیڈ ٹاون میں ’ ڈسکوری سٹی ‘ تعمیر کرنے کی بھی منظوری دی گئی ۔ 2017-18 کے بجٹ کے ساتھ ، سی ٹی آئی ٹی ایس پراجکٹ ، ٹی ایم ایس اور ایچ ٹی ایم ایس پراجکٹس کو بھی منظوری دی گئی ۔۔

TOPPOPULARRECENT