Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / ائمہ و موذنین مکہ مسجد و شاہی مسجد کے لیے عید کا تحفہ

ائمہ و موذنین مکہ مسجد و شاہی مسجد کے لیے عید کا تحفہ

ایک ماہ کی تنخواہ بطور نذرانہ جاری ، تراویح پڑھانے والے ائمہ اور ملازمین بھی شامل
حیدرآباد ۔ 6 ۔ جولائی (سیاست نیوز) محکمہ اقلیتی بہبود نے مکہ مسجد اور شاہی مسجد کے ائمہ اور مؤذنین کے علاوہ ملازمین کیلئے عید کے تحفہ کے طور پر بطور نذرانہ ایک ماہ کی تنخواہ جاری کی ہے۔ گزشتہ چند برسوں سے عید کے موقع پر ایک ماہ کی تنخواہ بطور نذرانہ دیئے جانے کی روایت موجود ہے۔ تاہم جاریہ سال محکمہ کی جانب سے دونوں مساجد میں تراویح کی امامت کرنے والے ائمہ کیلئے بطور ہدیہ زائد رقم منظوری کی گئی۔ مکہ مسجد میں تراویح پڑھانے والے ائمہ کے نام پر ایک لاکھ روپئے منظور کئے گئے لیکن بتایا جاتا ہے کہ یہ رقم بعض غیر متعلقہ افراد میں بھی تقسیم کی گئی جنہوں نے تراویح کی امامت نہیں کی۔ بتایا جاتاہے کہ ایک لاکھ روپئے میں سے  مسجد کے دو ائمہ حافظ رضوان قریشی اور حافظ عثمان نقشبندی کو 25, 25 ہزار روپئے منظور کئے گئے۔ اس کے علاوہ دوسرے دہے میں تراویح پڑھانے والے جامعہ نظامیہ کے عالم دین مولانا لطیف احمد کو 25,000 اور دو مؤذنین کو فی کس 12,500 روپئے تقسیم کئے گئے۔ سپرنٹنڈنٹ مکہ مسجد نے یہ تقسیم عمل میں لائی۔ حافظ محمد رضوان قریشی امام و خطیب مکہ مسجد نے تین قرآن مجید سنانے کا شرف حاصل کیا جبکہ ایک امام نے تراویح پڑھانے سے معذرت کرلی ۔ اس کے علاوہ دو مؤذنین بھی تراویح پڑھانے سے قاصر رہے۔ تاہم ہدیہ کی تقسیم کے معاملہ میں تمام کو شامل کیا گیا ۔ حالانکہ حکومت نے تراویح پڑھانے والوں کیلئے یہ رقم جاری کی تھی جبکہ عید کے سلسلہ میں نذرانہ تمام ملازمین بشمول ائمہ اور مؤذنین جاری کیا گیا۔ دوسری طرف شاہی مسجد کے امام اور ملازمین کیلئے ایک ماہ کی تنخواہ بطور نذرانہ کے علاوہ تراویح پڑھانے والے امام کو ہدیہ کے طور پر 50,000 روپئے جاری کئے گئے چونکہ شاہی مسجد میں صرف ایک ہی امام نے تراویح پڑھائی جبکہ تہجد میں ان کے بھائی نے امامت کی۔ تاہم ساری رقم قاری احسن الحمومی کو جاری کی گئی ہے۔ اس کے علاوہ شاہی مسجد کے امام ، مؤذن  اور تمام ملازمین کیلئے ایک ماہ کی تنخواہ علحدہ طور پر بطور نذرانہ منظور کی گئی ہے۔

TOPPOPULARRECENT