Sunday , September 24 2017
Home / شہر کی خبریں / ائمہ و موذنین کا اعزازیہ ، رمضان پیاکیج اور مساجد کیلئے بجٹ کی اجرائی

ائمہ و موذنین کا اعزازیہ ، رمضان پیاکیج اور مساجد کیلئے بجٹ کی اجرائی

23 کروڑ 75 لاکھ منظور ، چیف منسٹر کی دعوت افطار پر 200 مساجد میں افطار و طعام
حیدرآباد ۔ 22 ۔ جون (سیاست نیوز) حکومت نے ائمہ اور مؤذنین کے اعزازیہ ، دعوت افطار، رمضان پیکیج اور مساجد کی آہک پاشی اور تعمیر و مرمت کیلئے بجٹ جاری کیا ہے۔ وقف بورڈ کو جاریہ مالیتی سال کے پہلے سہ ماہی اور رمضان پیکیج کے تحت 23 کروڑ 75 لاکھ روپئے جاری کئے گئے، اس میں سے گزشتہ سال کی منظوریوں سے 43 لاکھ روپئے منہا کرلئے گئے۔ چیف اگزیکیٹیو آفیسر وقف بورڈ محمد اسد اللہ نے بتایا کہ ائمہ اور مؤ ذنین کو اعزازیہ کی اجرائی کا کام عیدالفطر سے قبل مکمل کرلیا جائے گا اور رمضان المبارک کے تحفے کے طور پر بقایہ جات کے ساتھ مکمل رقم جاری کردی جائے گی۔انہوں نے بتایا کہ حیدرآباد، محبوب نگر ، عادل آباد اور نظام آباد میں 50 فیصد درخواستوں کی یکسوئی کرلی گئی ہے اور باقی منظورہ درخواستوں کیلئے آن لائین اعزازیہ کی اجرائی کا کام جاری ہے ۔ ائمہ اور مؤذنین کو رقم راست ان کے اکاؤنٹ میں جمع کردی جائے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ جاریہ سال مساجد اور عیدگاہوں کیلئے گرانٹ ان ایڈ کے طورپر پانچ کروڑ روپئے منظور کئے گئے جس کے تحت ہر ضلع کو 50 لاکھ روپئے جاری کئے جائیں گے۔ اندرون دو یوم یہ رقم جاری کردی جائے گی۔ حیدرآباد میں وقف بورڈ کے تحت جبکہ اضلاع میں ضلع کلکٹرس کی جانب سے درخواستوں کی یکسوئی کی جائے گی۔ مساجد کمیٹیوں کو گرانٹ ان ایڈ کیلئے ضلع کلکٹرس کے پاس درخواست داخل کرنی ہوگی۔ محمد اسد اللہ نے کہا کہ گزشتہ سال ہر ضلع کو 50 لاکھ روپئے جاری کئے گئے تھے لیکن ابھی تک ضلع کلکٹرس نے رقم کی اجرائی کے بارے میں حساب پیش نہیں کیا ہے۔ انہوں نے بتایا کہ چیف منسٹر کی دعوت افطار کے موقع پر شہر اور اضلاع کی 200  مساجد میں دعوت افطار اور طعام کا انتظام کیا جائے گا ۔ اس کیلئے منتخبہ مساجد کو فی کس 2 لاکھ روپئے جاری کئے جارہے ہیں اور یہ کام 24 جون تک مکمل کرلیا جائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ جمعہ سے غریبوں میں کپڑوں کی تقسیم کا آغاز ہوگا اور مساجد کو کپڑوں کے پیاکٹس کی روانگی کا آغاز ہوچکا ہے ۔ چیف اگزیکیٹیو آفیسر کے مطابق وقف بورڈ کے عہدیداروں اور ملازمین کو کپڑوں کی تقسیم کے کام کی نگرانی سونپی گئی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ گزشتہ 12 برسوں میں پہلی مرتبہ حج ہاؤز کی عمارت کی کلرنگ کا کام شروع کیا جارہا ہے ۔ اس سلسلہ میں ای ٹنڈرس طلب کئے جائیں گے۔ حکومت نے ٹنڈرس کے شرائط و ضوابط کو منظوری دی ہے اور اندرون دو یوم ٹنڈرس کی اجرائی عمل میں آئے گی۔ انہوں نے بتایا کہ گزشتہ 12 برسوں میں حج ہاؤز کی عمارت کو رنگ نہیں کیا گیا ۔ اسد اللہ کے مطابق اس ٹنڈر میں عمارت کی تعمیر و مرمت ، الیکٹریکل ورک اور دیگر ضروری کام شامل رہیں گے۔ عمارت کے کئی حصوں میں چھت سے پانی اتر رہا ہے جس کے سبب دیواروں کو نقصان پہنچا۔ اس کے علاوہ عمارت میں کئی دیگر کام فوری توجہ طلب ہیں۔ حیدرآباد میں محکمہ پولیس اور جی ایچ ایم سی کے تعاون کے ذریعہ کپڑوں کی تقسیم کا عمل مکمل کیا جائے گا جبکہ اضلاع میں دعوت افطار اور کپڑوں کی تقسیم کی ذمہ داری ضلع کلکٹرس کو دی گئی ہے ۔

Top Stories

TOPPOPULARRECENT