Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / ابوبکر بغدادی پھر ایک مرتبہ منظرعام پر ، تازہ فوٹیج جاری

ابوبکر بغدادی پھر ایک مرتبہ منظرعام پر ، تازہ فوٹیج جاری

موصل کی مسجد میں حفظ قرآن کا مقابلہ، انعامات کی تقسیم اور بچوں سے بات چیت
لندن ۔ 17 فبروری (سیاست ڈاٹ کام) آئی ایس آئی ایس (داعش) سربراہ ابوبکر البغدادی کا ایک تازہ ویڈیو فوٹیج منظرعام پر آیا ہے جس میں شاذ و نادر ہی نظر آنے والے اس روپوش اور گوشہ نشین دہشت گرد کو عراقی شہر فلوجہ کی ایک مسجد میں بچوں سے بات کرتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ روزنامہ دی ٹائمس کے مطابق عراق کے ایک مقامی ٹیلیویژن چینل نے اس کی تصویریں دکھائی ہیں جن کی آزاد ذرائع سے کوئی توثیق نہیں ہوسکی ہے لیکن ایسا ظاہر کیا گیا ہے کہ یہ انتہاء پسند وہاں بچوں کے ایک چھوٹے سے ہجوم سے خطاب کررہا ہے۔ اس کے پس منظر میں دکھائی گئے بیانر پر درج تھا کہ داعش کے زیراہتمام حفظ قرآن کے مقابلہ، بغدادی انعامات عطا کریں گے۔ بغدادی جو دنیا کا ایک شدت سے مطلوب شخص ہے، شاذونادر ہی منظرعام پر آتا ہے۔ گذشتہ موقع پر وہ جولائی کے دوران اس وقت منظرعام پر دکھایا گیا تھا جب وہ موصل کی جامع مسجد میں نماز جمعہ کی امامت کررہا تھا اس سے دو ماہ قبل اس کے جنگجوؤں نے اس عراقی شہر پر قبضہ کیا تھا۔ دہشت گردی سے متعلق تحقیق و تجزیہ کے ایک ادارہ کے ماہرین نے کہا ہیکہ فوٹیج میں شامل دیگر افراد میں بغدادی کا ایک ہم شکل بھی دیکھا گیا جو سیکوریٹی کی حکمت عملی کے تحت اس کے ساتھ رکھا جاتا ہے کیونکہ امریکہ پہلے ہی بغدادی کے سر پر 10 ملین ڈالر کے انعام کا اعلان کرچکا ہے۔ تازہ فوٹیج میں بغدادی کے ساتھ سر پر سخت کپڑا اوڑھا ہوا ایک شخص بھی دیکھا گیا جو بعدازاں مقابلہ کے کامیاب طلبہ میں انعامات تقسیم کررہا تھا۔ بغدادی جو عراق میں امریکہ کے ایک قیدخانے کا سابق سپاہی ہے۔ بغداد یونیورسٹی کی اسلامی یونیوسٹی سے پوسٹ گریجویٹ سطح تک تعلیم حاصل کرچکا ہے اور 2003ء میں عراق پر اتحادی فوج کے قبضہ کے پہلے تک ایک خاندانی شخص کی حیثیت سے پرسکون زندگی گذار رہا تھا اور باور کیا جاتا ہے اس وقت وہ ایک عالم دین تھا لیکن 2010ء میں بغدادی داعش سے وابستہ ہوگیا اور بعدازاں اس کا سربراہ بن گیا۔

TOPPOPULARRECENT