Wednesday , April 26 2017
Home / Top Stories / اب پرانے اور نئے شہر میں کوئی تفریق نہیں ہوگی

اب پرانے اور نئے شہر میں کوئی تفریق نہیں ہوگی

تلنگانہ راشٹرا سمیتی بہت جلد پرانے شہر میں ترقیاتی کاموں کا آغاز کرنے کی پابند عہد
حیدرآباد۔18اپریل (سیاست نیوز) پرانے شہر اور نئے شہر کی تفریق کو ختم کرنے کیلئے تلنگانہ راشٹر سمیتی کام کرے گی اور بہت جلد پرانے شہر میں مزید ترقیاتی کاموںکا آغاز کیا جائے گا ساتھ ہی جاریہ کاموں کی عاجلانہ تکمیل کو ممکن بنانے کے اقدامات کئے جائیں گے۔ ریاستی وزیر بلدی نظم و نسق و انفارمیشن ٹکنالوجی مسٹر کے ٹی راما راؤ نے آج پرانے شہر کے علاوہ فلک نما میں بس ڈپو اور مغلپورہ میں اسپورٹس کامپلکس کا افتتاح انجام دیا۔مغلپورہ میں اسپورٹس کامپلکس کی افتتاحی تقریب سے خطاب کے دوران مسٹر کے ٹی راما راؤ نے بتایا کہ اندرون تین ماہ چارمینار پیدل راہرو پراجکٹ کے کاموں کی تکمیل عمل میں لائی جائے گی ۔ انہوں نے بتایا کہ شہر حیدرآباد میں ٹی آر ایس پارٹی کی جانب سے ترقیاتی کاموں کی انجام دہی میں کوئی کوتاہی نہیں کی جائے گی بلکہ پرانے شہر میں ترقیاتی کاموں کو مزید تیز کیا جائے گا۔ مسٹرکے ٹی راما راؤ نے کہا کہ چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ پرانے شہر کی ترقی میں خصوصی دلچسپی رکھتے ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ ٹی آر ایس حکومت کا مقصد پرانے شہر اور نئے شہر کے درمیان تفریق اور بنیادی سہولتوں کی فراہمی میں عدم مساوات کو دور کرتے ہوئے دونوں شہروں میں یکساں ترقی کو ممکن بنانا ہے ۔ ان افتتاحی تقاریب میں مسٹر کے ٹی راما راؤ کے ہمراہ ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی ‘ مسٹر پی مہندر ریڈی ریاستی وزیر ٹرانسپورٹ‘ مسٹر بی رام موہن مئیر مجلس بلدیہ عظیم تر حیدرآباد‘ جناب اسد الدین اویسی رکن پارلیمنٹ حیدرآباد‘ جناب میر عنایت علی باقری صدرنشین سٹ ون‘ جناب سید احمد پاشاہ قادری رکن اسمبلی چارمینار کے علاوہ مقامی کارپوریٹرس و عہدیدار موجود تھے۔مسٹر کے ٹی راما راؤ نے کہا کہ ریاستی حکومت پرانے شہر سے پسماندگی کے خاتمہ کیلئے کوشش کر رہی ہے اور انہوں نے پرانے شہر کے بلدی ‘ آبرسانی اور برقی مسائل حل کرنے کے لئے فوری طور پر اندرون ایک ہفتہ اجلاس طلب کریں گے اوراس اجلاس میں شہر کے منتخبہ عوامی نمائندوں اور عہدیداروں کومدعو کیا جائے گا تاکہ ان مسائل کی عاجلانہ یکسوئی عمل میں لائی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ ٹی آر ایس کے دور اقتدار میں پرانے شہر میں آر ٹی اے آفس کا افتتاح عمل میں لایا گیا اور آج فلک نما میں آر ٹی سی ڈپو میں افتتاح بھی کیا گیا۔ کے ٹی راما راؤ نے کہا کہ پرانے شہر فلک نما کے علاقہ میں جلد اراضیات کی نشاندہی کرتے ہوئے ڈبل بیڈروم فلیٹس کی تعمیر کا آغاز کیا جائے گا۔ انہوں نے بتایا کہ 5کروڑ روپئے کے اخراجات سے محبوب چوک مارکٹ کو عصری بنانے کے لئے ترقیاتی کاموں کو فوری شروع کرنے کی ہدایت دیدی گئی ہے علاوہ ازیں چندرائن گٹہ فلائی اوور برج سے متصل برج کی تعمیر کیلئے 27کروڑ روپئے منظور کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔مسٹر کے ٹی راما راؤنے بتایا کہ چارمینار کے قریب موجود تاریخی چار کمان کی آہک پاشی اور تحفظ کے لئے 1.25کروڑ سے کاموں کا آغاز کیا جائے گا۔ڈپٹی چیف منسٹر جناب محمد محمود علی نے اس موقع پر اپنے خطاب کے دوران کہا کہ پرانے شہر کی اس رفتار سے ترقی کے متعلق سونچ نہیں سکتے تھے لیکن ٹی آر ایس کے اقتدار میں پرانے شہر کی تیز رفتار ترقی ہورہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ چیف منسٹر کا سنہرے تلنگانہ کا خواب اس وقت تک پورا نہیں ہوسکتا جب تک تلنگانہ کے ہر خطہ کی ترقی نہیں ہوتی اسی لئے پرانے شہر اور نئے شہر کے درمیان موجود فرق کو ختم کرنے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ جناب محمد محمود علی نے بتایا کہ پرانے شہر کے تاریخی عمارتوں کے تحفظ اور ان کی ترقی کے لئے بھی متعدد اقدامات کئے جائیں گے اور پرانے شہر کے ترقیاتی کاموں کے لئے درکار بجٹ کے متعلق فکر کرنے کی کوئی ضرورت نہیں ہے۔حکومت بالخصوص چیف منسٹر مسٹر کے چندر شیکھر راؤ کی جانب سے پرانے شہر کی ترقی میں خصوصی دلچسپی لی جا رہی ہے ۔ ریاستی وزیر ٹرانسپورٹ مسٹر پی مہندر ریڈی نے فلک نما بس ڈپو کی افتتاحی تقریب سے خطاب کے دوران کہا کہ پرانے شہر میں عصری بسیں چلانے کے سلسلہ میں بہت جلد اقدامات کئے جائیں گے۔ ریاستی وزیر مسٹر کے ٹی راما راؤ نے پرانے شہر کے دورہ اور ترقیاتی کاموں کے افتتاح کے علاوہ میلاردیوپلی میں پلے گراؤنڈ اور پارک کا افتتاح انجام دیا ۔انہوں نے آرام گڑھ چوراہ پر عوامی بیت الخلاء اور پریماوتی نگر میں ماڈل مارکٹ کا افتتاح انجام دیا۔علاوہ ازیں عطا پور کے قریب چنتا کنٹہ تالاب کے تحفظ کیلئے کاموں کا افتتاح انجام دیا۔ مسٹر کے ٹی راما راؤ کے دورہ پرانا شہر میں ڈپٹی مئیر جناب بابا فصیح الدین‘ جناب سیدمحمود قادری سہیل کارپوریٹر پتھر گٹی ‘ جناب مصطفی علی مظفر کارپوریٹر شاہ علی بنڈہ کے علاوہ جناب ریاض الحسن آفندی کارپوریٹر دبیر پورہ اور متعلقہ محکمہ جات کے اعلی عہدیدار موجود تھے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT