Tuesday , October 17 2017
Home / ہندوستان / اتحاد اور یکجہتی کیلئے صدرجمہوریہ کی عوام سے دوبارہ اپیل

اتحاد اور یکجہتی کیلئے صدرجمہوریہ کی عوام سے دوبارہ اپیل

دہلی میں دسہرہ تقریب کے حاضرین سے پرنب مکرجی کا خطاب
نئی دہلی ۔ 22 اکٹوبر (سیاست ڈاٹ کام) صدرجمہوریہ پرنب مکرجی نے آج دسہرہ تہوار کے موقع پر ایک بار پھر عدم رواداری کے بڑھتے ہوئے واقعات کی مذمت کرتے ہوئے عوام سے اپیل کی کہ ہندوستان کے اتحاد اور یکجہتی کو برقرار رکھیں اور اپنے اختلافات بالائے طاق رکھ کر ملک کی تعمیر کیلئے متحد ہوجائیں۔ انہوں نے کہا کہ دسہرہ ہماری قدیم تہذیب کی علامت ہے اور ہمیں اپنے اختلافات فراموش کرکے تعمیر قوم کیلئے متحد ہوجانا چاہئے۔ یہی ہماری فتح ہوگی۔ صدرجمہوریہ دسہرہ تقاریب کے حاضرین سے پریڈ گراونڈ دہلی میں خطاب کررہے تھے جہاں راکشس راجہ راون اس کے بھائی اور فرزند کمبھ کرن اورمیگناد کے پتلے نذرآتش کئے گئے۔ گذشتہ 15 دن میں یہ پانچویں بار ہے جبکہ پرنب مکرجی نے عدم رواداری کے واقعات میں اضافہ پر اظہار تشویش کرتے ہوئے عوام سے اتحاد اور یکجہتی کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ انہیں امید ہیکہ خلوص، محبت اور اخوت بدی کی تمام طاقتوں پر فتح پائیں گے جو عوام میں انتشار پیدا کرنے کی کوشش کررہی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ دسہرہ ہمیں یاد دہانی کرتا ہیکہ نیکی، اچھائی اور راست بازی کا راستہ ہمیشہ فاتح ہوتا ہے۔ انہوں نے خواہش کی کہ جاریہ سال کے دسہرہ سے ہمیں اپنے اصولوں پر ثابت قدم رہنے کی تحریک ملے گی اور ہم اجتماعی طور پر تمام مخالفین کا سامنا کرتے ہوئے ہمہ جہتی قومی ترقی کے مقصد کی سمت پیشرفت کریں گے۔ گذشتہ پیر کو مکرجی نے رواداری، ناراضگی کی قبولیت کے بارے میں سنگین اندیشے ظاہر کئے تھے کہ یہ اقدار ملک میں معدوم ہورہی ہیں۔ انہوں نے کہا تھا کہ انسانیت اور تکثیریت کسی بھی حالت میں ترک نہیں کئے جانے چاہئیں کیونکہ یہی ہندوستان کی اجتماعی طاقت ہے جن کے ذریعہ سے ہم بدی کی طاقتوں پر کامیابی حاصل کرسکتے ہیں۔ مکرجی نے حاضرین سے نائب صدرجمہوریہ حامد انصاری، سابق وزیراعظم منموہن سنگھ ، صدر کانگریس سونیا گاندھی، نائب صدر راہول گاندھی اور بی جے پی کے قومی صدر امیت شاہ کے علاوہ دیگر اہم شخصیات کی موجودگی میں کیا۔ وزیراعظم نریندر مودی کو بھی مدعو کیا گیا تھا لیکن وہ آندھراپردیش کے دورہ پر تھے، جس کی وجہ سے شرکت نہیں کرسکے۔

TOPPOPULARRECENT