Tuesday , October 17 2017
Home / Top Stories / اترانچل میں زمین کھسکنے سے 16 مزدور ہلاک

اترانچل میں زمین کھسکنے سے 16 مزدور ہلاک

وزیراعظم، صدر کانگریس، مرکزی وزیرداخلہ کا اظہارافسوس ، سیلاب کا جائزہ
ایٹانگر ۔ 22 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) اروناچل پردیش کے ضلع تاوانگ میں مسلسل زبردست بارش سے زمین کھسکنے کے واقعات میں کم از کم 16 مزدور ہلاک ہوگئے جبکہ موسلادھار بارش کا ایک لیبر کیمپ نشانہ بن گیا۔ یہ واقعہ 3 بجے دن پیش آیا جبکہ مزدور قصبہ پھاملا میں مزدور ایک لیبر کیمپ میں تعمیراتی کام میں مصروف تھے۔ ملبہ سے جملہ 16 نعشیں برآمد کرلی گئی ہیں۔ زیادہ شدید زخمیوں کو پڑوسی ریاست آسام کے تیزپور ہاسپٹل منتقل کیا گیا ہے۔ ایس پی کے بموجب دو مزدور محفوظ ہیں۔ فوج، سیول انتظامیہ، پولیس اور دیہاتیوں نے متحدہ کارروائی کرتے ہوئے نعشیں برآمد کیں۔ نیو لیبرانگ اور سرکاری اعلیٰ ثانوی اسکول کے درمیان کی سڑک بھی کٹ گئی ہے۔ اسی علاقہ کی رہائشی عمارت کو بھی زمین کھسکنے سے نقصان پہنچا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی نے انسانی زندگیوں کے ضائع ہونے پر اظہار رنج کیا ہے۔ اپنے پیغام میں وزیراعظم نے سوگوار خاندانوں سے اظہارتعزیت کیا ہے۔ صدر کانگریس سونیا گاندھی نے انسانی ہلاکتوں پر جو زمین کھسکنے سے واقع ہوئی ہیں صدمہ پہنچنے کا اظہار کرتے ہوئے کانگریس کے ارکان اسمبلی، صدر پردیش کانگریس اور دیگر ہراول تنظیموں سے رضاکارانہ طور پر راحت رسانی انجام دینے کی خواہش کی ہے۔

نئی دہلی سے موصولہ اطلاع کے بموجب وزیرداخلہ راجناتھ سنگھ نے آج اروناچل پردیش میں سیلاب کی صورتحال کا جائزہ لیا، جہاں زمین کھسکنے کے واقعہ میں 14 افراد ہلاک ہوئے ہیں۔ راجناتھ سنگھ نے چیف منسٹر کالیکوپال کو فون کیا اور وہاں کی کیفیت معلوم کی۔ ریاست میں موسلادھار بارش کے بعد سیلاب جیسی صورتحال پیدا ہوئی ہے۔ ضلع چھنگلنگ اور دیگر اضلاع میں سیلاب کے باعث عام زندگی مفلوج رہی۔ راجناتھ سنگھ نے اروناچل پردیش کی صورتحال سے نمٹنے کیلئے مرکز کی جانب سے بھرپور تعاون کرنے اور مدد کا تیقن دیا۔ انہوں نے ڈائرکٹر جنرل نیشنل ڈیزاسٹر رسپانس فورس او پی سنگھ کو ہدایت دی کہ وہ ایک بچاؤ کاری ٹیم کے ساتھ ٹاؤن تورنگ کا دورہ کریں اور چین کی سرحد سے متصل اس علاقہ کے مواضعات میں امدادی کام انجام دیئے جائیں۔ ٹاؤن توانگ میں زمین کھسکنے کے واقعہ میں اب تک 14 نعشیں برآمد کی جاچکی ہیں اور اس مقام سے مٹی میں دبے ہوئے لوگوں کو نکالا جارہاہے۔ گذشتہ چند دن سے مسلسل بارش کی وجہ سے سیلاب نے کئی اضلاع میں تباہی مچائی ہے۔ دارالحکومت ایٹانگر میں بھی سیلاب کی صورتحال ہے۔

TOPPOPULARRECENT