Saturday , March 25 2017
Home / Top Stories / اتراکھنڈ کے 69 اور یو پی کے 67 حلقوں میں آج رائے دہی

اتراکھنڈ کے 69 اور یو پی کے 67 حلقوں میں آج رائے دہی

اتراکھنڈ میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان راست مقابلہ ، باغی امیدوار سے دونوں جماعتوں کو اُلجھن

لکھنؤ ؍ دہرہ دون 14 فروری (سیاست ڈاٹ کام) اترپردیش میں سات مرحلوں میں ہونے والے اسمبلی انتخابات کے دوسرے مرحلے کے تحت 67 حلقوں میں اور پڑوسی ریاست اتراکھنڈ اسمبلی کے 69 حلقوں میں کل چہارشنبہ کو رائے دہی ہوگی۔ مغربی اترپردیش کے 11 اضلاع کے 67 حلقوں میں 2012 ء کے انتخابات میں ایس پی کو 34 نشستیں ملی تھیں۔ اس مرتبہ حکمراں جماعت نے کانگریس سے مفاہمت کی ہے جس کا بی جے پی اور ایس پی سے سخت مقابلہ ہے۔ ان حلقوں سے 720 امیدوار مقابلہ کررہے ہیں جن میں ریاستی وزیر و ایس پی لیڈر اعظم خاں اور ان کے بیٹے عبداللہ اعظم بھی شامل ہیں جو بالترتیب رامپور اور ساور سے مقابلہ کررہے ہیں۔ انتخابی مہم کے دوران وزیراعظم نریندر مودی، بی جے پی کے صدر امیت شاہ نے چیف منسٹر اکھلیش یادو اور ان کی حلیف کانگریس کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔ راہول گاندھی اور اکھلیش نے ایس پی ۔ کانگریس اتحاد کی مہم چلائی تھی۔ دوسری طرف پڑوسی ریاست اتراکھنڈ کے 13 اضلاع میں 70 کے منجملہ 69 اسمبلی حلقوں میں تقریباً 74.20 لاکھ ووٹرس 628 امیدواروں کی قسمت کا فیصلہ کریں گے۔ اکثر حلقوں میں حکمراں کانگریس اور اپوزیشن بی جے پی کے درمیان راست مقابلہ ہے۔ ان دونوں جماعتوں کو درجن بھر باغیوں کا سامنا بھی ہے جو بحیثیت آزاد امیدوار میدان میں اُترے ہیں۔ ان کی موجودگی دونوں جماعتوں کے امکانات پر اثرانداز ہوسکتی ہے۔ بی جے پی چند حلقوں سے کانگریس کے باغیوں کو اپنا امیدوار نامزد کی ہے۔ راہول گاندھی نے رشی کیش اور سومیشور میں انتخابی مہم چلائی۔ کانگریس کے چیف منسٹر ہریش راوت نے رائے دہندوں کو راغب کرنے شب و روز محنت کی۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT