Wednesday , October 18 2017
Home / ہندوستان / اتراکھنڈ ہائیکورٹ میں مرکز کی درخواست مسترد

اتراکھنڈ ہائیکورٹ میں مرکز کی درخواست مسترد

صدر راج کے خلاف برطرف چیف منسٹر کی درخواست پر سماعت جاری
نینی تال۔ 6 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) اتراکھنڈ ہائیکورٹ میں اس ریاست میں صدر راج کے نفاذ کو چیلنج کرتے ہوئے سابق چیف منسٹر ہریش راوت کی طرف سے دائر کردہ درخواست کی سماعت کو ملتوی کرنے سے متعلق مرکز کی اپیل کو آج مسترد کردیا۔ چیف جسٹس کے ایم جوزف اور جسٹس وی کے بشٹ پر مشتمل ایک بنچ نے دو ایڈیشنل سالیسیٹرس جنرل (اے ایس جی)کو مرکز کی نمائندگی کرتے ہوئے درخواستوں کی پیشکشی کی اجازت نہیں دی۔ ان دونوں نے استدلال کیا تھا کہ راوت نے اپنی درخواست کے ذریعہ ’ایک بالکلیہ نیا مقدمہ‘ پیش کیا ہے چنانچہ اس کی سماعت ملتوی کی جائے۔ ایڈیشنل سالیسیٹرس جنرل تشار مہتا اور مہندر سنگھ نے اس بنیاد پر التوا کی درخواست کی تھی کہ ریاستی اسمبلی کی طرف سے تصرف بل کی مبینہ منظوری کا مسئلہ مکمل طورپر نئے حقائق  بیان کرتا ہے اور اس پر یہ جواب دینے کی ضرورت ہے کہ آیا وہ اس مقدمہ کے بنیادی موضوع سے نمٹ رہے ہیں یا کوئی نیا مقدمہ پیش کررہے ہیں۔ تاہم بنچ نے کہا کہ ’’ہم مقدمہ کی سماعت ملتوی نہیں کررہے ہیں اگر آپ جواب داخل کرنا چاہتے ہیں تو آج یا کل اپنا جواب داخل کریں‘‘۔ بنچ نے افسران خاندان کو تیقن دیا کہ وہ اس مسئلہ پر مرکز کا جواب داخل کرنے تک مزید سماعت نہیں کی جائے گی۔ تاہم بنچ نے یہ واضح کیا کہ مقدمہ کی سماعت ضرور جاری رہے گی۔ سینئر وکیل ابھیشیک مانو سنگھوی نے برطرف چیف منسٹر کی طرف سے رجوع ہوکراس مقدمہ کی سماعت کو ملتوی کرنے مرکز کی کوششوں کی مخالفت کی۔

TOPPOPULARRECENT