Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / اترپردیش میں مقبوضہ اراضیات پر وائیٹ پیپر کا اصرار

اترپردیش میں مقبوضہ اراضیات پر وائیٹ پیپر کا اصرار

چیف منسٹر اکھلیش یادو کو گورنر رام نائیک کا مکتوب
کانپور ۔ 16 ۔ جون : ( سیاست ڈاٹ کام ) : گورنر اترپردیش رام نائک نے آج کہا ہے کہ متھرا کے تصادم کو ٹالا جاسکتا تھا اگر اکھلیش یادو حکومت بروقت ہائی کورٹ کے احکامات کی تعمیل کرتی ۔ پرتشدد جھڑپوں میں 29 افراد بشمول 2 پولیس عہدیداروں کی موت پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے گورنر نے کہا کہ ضلع میں جو کچھ بھی ہوا ناقابل قیاس تھا ۔ انہوں نے میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے بتایا کہ اگر جواہر باغ متھرا میں ناجائز قبضوں کی برخاستگی کے لیے الہ آباد ہائی کورٹ کے احکامات پر عمل کیا جاتا تو تصادم سے گریز کیا جاسکتا تھا ۔ واضح رہے کہ مسٹر رام نائک نے کل حکومت کو یہ ہدایت دی ہے کہ ریاست میں غیر قانونی قبضوں پر سرکاری موقف سے آگاہ کرے ۔ انہوں نے بتایا کہ چیف منسٹر اکھلیش یادو نے متھرا کے واقعہ پر تفصیلات سے واقف کروایا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ جواہر باغ واقعہ کے بعد حکومت کو چاہئے کہ ریاست میں جہاں کہیں بھی سرکاری اراضیات پر قبضہ کیا گیا اس کا فی الفور تخلیہ کروانے سے بازیاب کرلیا جائے قبل ازیں چیف منسٹر کو موسومہ ایک مکتوب گورنر نے کہا کہ پارکس ، گھانس کے میدانوں ، تالابوں اور عوامی مقامات پر قبضوں سے متعلق ایک وائیٹ پیپر جاری کیا جائے ۔۔

TOPPOPULARRECENT