Sunday , September 24 2017
Home / سیاسیات / اترکھنڈ : باغی کانگریس ایم ایل ایز پر تجسس برقرار

اترکھنڈ : باغی کانگریس ایم ایل ایز پر تجسس برقرار

چیف منسٹر راوت کی اسمبلی میں عددی طاقت کی آزمائش کل ہوگی
دہرہ دون ، 26 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) اترکھنڈ میں 9 باغی کانگریس ایم ایل ایز کے تعلق سے آج تجسس مزید بڑھ گیا جبکہ دوشنبہ کو ایوان اسمبلی میں عددی طاقت کی آزمائش ہونے والی ہے اور پریشانی سے دوچار چیف منسٹر ہریش راوت نے باغیوں کو نااہل قرار دینے کے مطالبے کی تائید کردی نیز لیجسلیٹرز کی حمایت جٹانے کیلئے مبینہ رشوت پر حریفوں میں الزامات کا تبادلہ بھی ہوا۔ باغی ایم ایل ایز کو قانون انسدادِ انحراف کے تحت اسپیکر گوئند سنگھ کنجوال کی جانب سے نوٹسوں پر جواب کیلئے مہلت آج شام ختم ہوگئی۔ دریں اثناء باغی کانگریس لیجسلیٹرز نے الزام عائد کیا کہ انھیں اسمبلی میں عددی طاقت کی آزمائش کے دوران تائید کیلئے راوت کی جانب سے رشوت کی پیشکش ہوئی ہے اور ’’اسٹنگ‘‘ آپریشن کی ویڈیو جاری کی جس میں چیف منسٹر کو دکھایا گیا، جنھوں نے اسے ’’فرضی‘‘ قرار دے دیا۔ کانگریس نے الزام عائد کیا کہ صدر بی جے پی امیت شاہ کی گھٹیا چالوں والا شعبہ اپنے کام پر لگا ہوا ہے، جبکہ زعفرانی جماعت نے راوت حکومت کی فوری برطرفی کا مطالبہ کیا ہے۔

 

اترکھنڈ میں صدر راج ممکن
مرکزی کابینہ کی میٹنگ کا انعقاد
نئی دہلی ، 26 مارچ (سیاست ڈاٹ کام) مرکزی کابینہ کی میٹنگ آج رات یہاں منعقد ہوئی تاکہ اترکھنڈ کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے جبکہ یہ قیاس آرائی ہے کہ اس ریاست میں صدر راج کے امکان پر غور ہوسکتا ہے۔ وزیراعظم نریندر مودی کی آسام سے واپسی کے فوری بعد کابینی اجلاس منعقد ہوا۔ اس میٹنگ سے قبل بی جے پی وفد نے صدرجمہوریہ پرنب مکرجی سے ملاقات کی اور اترکھنڈ میں صدر راج کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ چیف منسٹر ہریش راوت کو عہدہ پر برقراری کا کوئی حق نہیں کیونکہ ایک اسٹنگ آپریشن نے مبینہ طور پر انھیں 28 مارچ کو ایوان اسمبلی میں عددی طاقت کی آزمائش سے قبل باغی پارٹی ایم ایل ایز کو تائید جٹانے کیلئے لالچ دیتے ہوئے دکھایا گیا ہے۔ دریں اثناء کانگریس نے راوت حکومت کو اسمبلی میں اکثریت حاصل ہونے کا ادعا کیا ہے۔

TOPPOPULARRECENT