Wednesday , August 23 2017
Home / Top Stories / اتر پردیش انتخابات کے پیش نظر رام مندر مسئلہ پر زور و شور

اتر پردیش انتخابات کے پیش نظر رام مندر مسئلہ پر زور و شور

ریاست کے عوام مودی کے ’ ناٹک ‘ اور ڈرامہ کو قبول نہیں کرینگے ۔ بی جے پی کو شکست ہوگی ۔ بی ایس پی سربراہ مایاوتی کا خطاب
لکھنو، 15 جنوری ( سیاست ڈاٹ کام ) بی جے پی پر رام مندر مسئلہ کو اتر پردیش میں 2017ء کے اسمبلی انتخابات کا موضوع بنانے کا الزام عائد کرتے ہوئے بی ایس پی کی سربراہ مایاوتی نے آج وزیر اعظم نریندر مودی پر شدید تنقید کی اور کہا کہ دہلی اور بہار کے رائے دہندوں کی طرح اتر پردیش کے ووٹرز بھی ان کی ڈرامہ بازیوں کا شکار نہیں ہوں گے ۔ سابق چیف منسٹر یو پی نے آج اپنی 60 ویں سالگرہ تقریب منائی ۔ انہوں نے اس موقع پر الزام عائد کیا کہ مرکزی حکومت نے فرقہ وارانہ طاقتوں کو پوری آزادی دے رکھی ہے جس کے نتیجہ میں ملک میں نراج اور بے چینی کی کیفیت پیدا ہوگئی ہے ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ چونکہ اب یو پی اسمبلی کے انتخابات قریب آ رہے ہیں، بی جے پی ، آر ایس ایس اور دیگر تنظیمیں رام مندر کا مسئلہ اُچھال رہی ہیں، حالانکہ یہ معاملہ سپریم کورٹ میں زیر دوراں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ووٹ حاصل کرنے کیلئے مذہبی جذبات سے کھیلنا بی جے پی کیلئے فائدہ مند نہیں ہوگا ۔ انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم مودی نے اپنا انتخابی حلقہ وارانسی رکھنے کے باوجود اس ریاست کو نظرانداز کیا لیکن  اب چونکہ انتخابات قریب آ رہے ہیں، اس لئے وہ بھی اس ریاست کی ترقی کی باتیں کر رہے ہیں۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ مودی نے اب دہلی اور بہار کی طرح اپنا ناٹک شروع کردیا ہے ۔ لیکن اتر پردیش کے عوام ان کے جھانسے میں نہیں آئیں گے، یو پی کے چناؤ میں بھی بی جے پی کو شکست کا سامنا کرنا پڑے گا ۔

یہ الزام عائد کرتے ہوئے کہ مرکزی حکومت ڈاکٹر بی آر امبیڈکر کے نام پر دلتوں کی توجہ حاصل کرنے کی کوشش کر رہی ہے، انہوں نے کہا کہ اگر مرکز اس مسئلہ پر سنجیدہ ہے تو اسے دلتوں کے حق میں اور بابا صاحب امبیڈکر کے پیرو افراد کی بہتری کیلئے کام کرنا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی حکومت کو چاہئے کہ وہ ترقیوں میں تحفظات کے بل کو منظوری د ے، اسے چاہئے کہ وہ غریبوں کو تحفظات فراہم کرے جو دوسری ذاتوں سے پسماندہ ذاتوں میں شامل ہو رہے ہیں۔ اس کے علاوہ دستور میں ترمیم کرتے ہوئے اعلیٰ ذات کے غریبوں کو بھی تحفظات دینے کی ضرورت ہے لیکن حکومت اس سلسلہ میںکچھ بھی نہیں کر رہی ہے ۔ لوک سبھا انتخابات کے دوران وزیر اعظم مودی کے ’’اچھے دن‘‘ کے نعرہ کے تعلق سے مایاوتی نے ادعا کیا کہ وزیر اعظم کا وعدہ صرف ایک خواب بن کر رہ گیا ہے اور اس کا الٹا اثر ہوا ہے کہ عوام کے دن بُرے ہوگئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ موجودہ اقتدار میں سرمایہ داروں کو فائدہ مل رہا ہے ۔ خام تیل کی قیمتیں 30 ڈالر فی بیارل تک گر گئی ہیںلیکن اس کے فوائد عام آدمی تک نہیں پہنچائے جا رہے ہیں۔

 

حکومت کے سربراہ مودی رہنے تک رام مندر کیلئے مہم درکار نہیں : توگاڑیہ
لکھنو ، 15 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) صدر وی ایچ پی پراوین توگاڑیہ نے کہا کہ ایودھیا میں رام مندر کی تعمیر کیلئے ایجی ٹیشن کی ضرورت نہیں ہوگی کیونکہ نریندر مودی مرکز میں حکومت کے سربراہ ہیں اور وہ قانون سازی کے ذریعہ رام مندر کی تعمیر کو یقینی بنائیں گے۔

TOPPOPULARRECENT