Wednesday , August 23 2017
Home / شہر کی خبریں / اجمیر شریف میں رباط اور رنگاریڈی میں حج ہاؤز کی تعمیر ندارد

اجمیر شریف میں رباط اور رنگاریڈی میں حج ہاؤز کی تعمیر ندارد

چیف منسٹر کے سی آر کو وضاحت کرنے کا مشورہ، سید نظام الدین
حیدرآباد ۔ 9 جولائی (سیاست نیوز) ترجمان تلنگانہ پردیش کانگریس کمیٹی سید نظام الدین نے رقمی منظوریوں کے باوجود ضلع رنگاریڈی میں نیا حج ہاؤز اور اجمیر میں تلنگانہ کے زائرین  کیلئے رباط تعمیرات نہ کرنے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے اس کی مسلمانوں سے وضاحت کرنے کا چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر سے مطالبہ کیا۔ مسٹر سید نظام الدین نے کہا کہ نامپلی حج ہاؤز عازمین حج کیلئے تنگ دامنی کا شکوہ کرنے کا جائزہ لینے کے بعد چیف منسٹر متحدہ آندھراپردیش مسٹر این کرن کمار ریڈی نے ضلع رنگاریڈی کے پہاڑی شریف علاقہ میں نیا حج ہاؤز تعمیر کرنے کیلئے اراضی کا انتخاب کرتے ہوئے 12 کروڑ روپئے منظور کیا تھا۔ تاہم علحدہ ریاست تلنگانہ کی تشکیل کے 25 ماہ بعد بھی ٹی آر ایس حکومت نے نئے حج ہاؤز کی تعمیر کیلئے کوئی توجہ نہیں دی اور نہ ہی کبھی اس کا جائزہ لیا۔ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے اجمیر میں تلنگانہ کے زائرین کیلئے رباط تعمیر کرنے کا مسلمانوں سے وعدہ کیا اور ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر محمد محمود علی کو چیف منسٹر راجستھان سے ملاقات کرنے کی ہدایت دی اور 5 کروڑ روپئے بھی منظور کیا۔ ڈپٹی چیف منسٹر مسٹر محمد محمود علی نے چیف منسٹر راجستھان مسز وسندھرا راجیہ سندھیا سے ملاقات کے بعد بہت جلد رباط تعمیر کرنے کا اعلان کیا مگر 2 سال گذرنے کے باوجود اس جانب ابھی تک کوئی پیشرفت نہیں ہوئی جبکہ کیرالا میں سائی بابا کے بھکتوں کے قیامگاہ کیلئے تلنگانہ حکومت کی جانب سے اراضی بھی حاصل کرلی گئی مگر اجمیر میں رباط تعمیر کرنے کے وعدے پر کوئی عمل نہیں کیا گیا۔ مسٹر سید نظام الدین نے کہا کہ چیف منسٹر تلنگانہ کے سی آر نے اقلیتی وزارت کا قلمدان اپنے پاس رکھا ہے باوجود اس کے انہوں نے نئے حج ہاؤز اور رباط کی تعمیرات کا اعلیٰ عہدیداروں کے ساتھ کوئی جائزہ اجلاس طلب نہیں کیا۔ کے سی آر سارے تلنگانہ کے اور تمام مذاہب اور طبقات کے چیف منسٹرس ہیں مگر اقلیتی مسائل کو نظرانداز کررہے ہیں جبکہ پشکرالو انعقاد کرنے کیلئے چیف منسٹر وزراء کی کمیٹی تشکیل دے رہے ہیں۔ کروڑہا روپئے خرچ کررہے ہیں یا دادری اور ویملواڑہ منادر کی تعمیرات پر ہزاروں کروڑ روپئے خرچ کررہے ہیں۔ اعلیٰ عہدیداروں کا جائزہ لے رہے ہیں۔ ہندوؤں کے مقدس مقامات کا خود دورہ کرتے ہوئے تعمیری کاموں کا جائزہ لے رہے ہیں۔ اس پر کسی کو بھی کوئی اعتراض نہیں ہے مگر چیف منسٹر کی ذمہ داری ہیکہ وہ نئے حج ہاؤز اور اجمیر میں رباط کی تعمیر کیلئے منظورہ رقم کا استعمال کرنے اور مسلمانوں کو سہولتیں فراہم کرنے کیلئے اعلیٰ سطحی اجلاس طلب کرتے ہوئے مسلمانوں میں پائی جانے والی بے چینی کو دور کریں۔

TOPPOPULARRECENT