Sunday , August 20 2017
Home / ہندوستان / احتجاجی سابق فوجیوں کا صدر جمہوریہ کی دعوت کا بائیکاٹ

احتجاجی سابق فوجیوں کا صدر جمہوریہ کی دعوت کا بائیکاٹ

نئی دہلی /18 ستمبر (سیاست ڈاٹ کام) سابق فوجیوں نے فیصلہ کیا ہے کہ صدر جمہوریہ پرنب مکرجی کی آئندہ ہفتہ چائے کی دعوت کا بائیکاٹ کیا جائے۔ صدر جمہوریہ نے 1965ء کی جنگ کے سابق فوجیوں کو چائے پر مدعو کیا ہے۔ مرکزی حکومت کی جانب سے ایک رتبہ، ایک پنشن اسکیم میں سنگین کوتاہیوں کو اجاگر کرنے کے لئے یہ فیصلہ کیا گیا ہے۔ سابق فوجی پہلے ہی تمام سرکاری تقاریب کا جن کا اہتمام 1965ء کی ہند۔ پاک جنگ کی گولڈن جوبلی منانے کے لئے کیا گیا تھا، بائیکاٹ کرچکے ہیں۔ سابق فوجیوں کے متحدہ محاذ کے ذرائع ابلاغ کے مشیر ریٹائرڈ کرنل انل کول نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ان کے اعزاز میں ترتیب دی ہوئی کسی تقریب میں فوجیوں کے کھڑے رہنے کا کیا جواز ہے؟ جب کہ ان کے مطالبات تسلیم نہیں کئے جاتے۔ انھوں نے ایک مکتوب تمام سابق سربراہان فوج کو روانہ کرتے ہوئے ان سے بھی سرکاری تقاریب کا بائیکاٹ کرنے کی اپیل کی ہے۔ فضائیہ، بحریہ اور بری فوج کے سابق سربراہان کو یہ مکاتیب روانہ کردیئے گئے ہیں۔

TOPPOPULARRECENT