Friday , August 18 2017
Home / Top Stories / احتجاجی مسلم خاتون کو ٹرمپ کی ریلی سے نکال دیا گیا

احتجاجی مسلم خاتون کو ٹرمپ کی ریلی سے نکال دیا گیا

واشنگٹن ، 9 جنوری (سیاست ڈاٹ کام) ایک مسلم خاتون کو ڈونالڈ ٹرمپ کی صدارتی مہم کی ریلی سے نکال دیا گیا کیونکہ انھوں نے ریپبلکن کے نمایاں دعوے دار کے خلاف خاموش احتجاج درج کرایا، جنھوں نے امریکہ میں مسلمانوں کے داخلے پر امتناع عائد کردینے کا مطالبہ کر رکھا ہے۔ ساؤتھ کیرولینا میں اس ایونٹ کے ٹیلی ویژن فوٹیج میں دکھایا گیا کہ 56 سالہ فلائٹ اٹنڈنٹ روز حامد نے ہیڈاسکارف لگا رکھا تھا اور ڈھیلا ڈھالا سبز شرٹ زیب تن کیا تھا جس پر تحریر تھا، ’’سلام۔ میں امن کی خاطر آئی ہوں۔‘‘ وہ پوڈیم کی طرف دیکھتے ہوئے خاموش کھڑی رہیں جبکہ بقیہ ہجوم اپنی نشستوں پر بیٹھا ہوا تھا۔ بعدازاں انھیں سکیورٹی والوں نے اس مقام سے باہر کردیا جبکہ ٹرمپ کے حامیوں نے احتجاجی خاتون کے چہرہ پر ریپبلکن لیڈر کے نام والے پلے کارڈز لہرائے اور ان کے حق میں نعرے لگائے۔ احتجاجی خاتون نے گزشتہ شب کی ریلی کے بعد ’سی این این‘ کو بتایا کہ ارب پتی رئیل اسٹیٹ بزنسمین کے ایک حامی نے انھیں گھور کر دیکھتے ہوئے کہا تھا کہ، ’’تمھارے پاس بم ہے، تمھارے پاس بم ہے‘‘۔

TOPPOPULARRECENT