Thursday , August 24 2017
Home / اضلاع کی خبریں / ادونی میں مسلم سیاسی قائدین ، دانشوروںکا اجلاس

ادونی میں مسلم سیاسی قائدین ، دانشوروںکا اجلاس

آئی ٹی کالج ،اقامتی ہاسٹل اور شادی خانہ کی تعمیر کیلئے غور و فکر
ادونی /24 جنوری (سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) شاہی خطیب جناب محمد علی ہاشمی کی صدار ت میں مدرسہ الربانی قاضی پوری ادونی میں مسلم قائدین و دانشوروںکا اجلاس طلب کیا گیا ۔یہ اجلاس شہرمیں آئی ٹی کالج ، اقامتی ہاسٹل اور شادی خانہ کی تعمیر اور اس کے برخلاف دھوبی تنظیم کا احتجاج کو لیکر غور و فکر کیلئے منعقد کیا گیا۔ جس میں ایم آئی ایم، تلگو دیشم ، کانگریس ، ایس ڈی پی آئی کے سیاسی قائدین کے علاوہ شہر کے معزز شخصیات نے بھی شرکت کی۔ اجلاس میں مختار احمد رکن بابری مسجد ری کنسٹرکشن کمیٹی نے بتایا کہ مرکزی اور ریاستی حکومت کی جانب سے مسلم اقلیتوں کو آئی ٹی کالج ، شادی خانہ ، اقامتی ہاسٹل کی تعمیر  کیلئے 11 کروڑ کی رقم منظور کی گئی ہے ۔ لہذا ہمیں اس رقم کو استعمال میں لانے کی ضرورت ہے ۔ جس کیلئے سرکاری عہدیداروں نے اسلام جھرہ میں واقع دھوبی گھاٹ کی جگہ کو ترجیح دی ہے ۔ اس کے برخلاف دھوبی تنظیم کا احتجاج  مسئلے کا موضوع بحث بنی ہوئی ہے۔ لہذا اقلیتی طبقے کے قائدین و دانشوروں کو چاہئے کہ وہ موجودہ رکن اسمبلی سائی پرساد ریڈی اور سابق رکن اسمبلی تلگو دیشم پارٹی مناکشی نائیڈو سے ملکر رائے اتفاق کریں۔ بعد ازاں مختلف قائدین نے اپنے رائے مشورے دئے ۔ جس کے بعد صدر جلسہ جناب خطیب محمد علی ہاشمی نے بتایا کہ بروز پیر قائدین و دانشوروں کا ایک وفد اس مسئلے کے حل کیلئے آر ڈی او ادونی کو ایک یادداشت پیش کرے گا۔ اس موقع پر مختار احمد ، شاہ شاہ ولی( ٹرسٹی شاہی جامع مسجد)، محمد عثمان سابق وقف بورڈ چیرمن ، فیاض احمد ایم آئی ایم ، فخر الدین تلگو دیشم قائد، امتیاز، الطاف حسین ، نذیر احمد ، عبدالعظیم ،عبدالقادر، شاکر احمد ، منیار یونس کانگریس قائد ،حافظ غیاث الدین صاحب، خطیب جنید احمد ، عبدالرشید ، محمد غوث ، پٹیل فیاض ، حضرت صاحب وغیرہ شریک رہے ۔

TOPPOPULARRECENT