Friday , July 21 2017
Home / شہر کی خبریں / اراضی اسکام میں کئی بڑے شخصیتوں کے نام ، حکومت کا افشاء سے گریز

اراضی اسکام میں کئی بڑے شخصیتوں کے نام ، حکومت کا افشاء سے گریز

کیشو راؤ سے ناراضگی پر نام کا انکشاف ، بدعنوانیاں عروج پر ، پروفیسر کودنڈا رام
حیدرآباد ۔ 12 ۔ جون : ( سیاست نیوز ) : صدر نشین تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی پروفیسر کودنڈا رام نے 10 ہزار ایکڑ سرکاری اراضی کا اسکام ہونے کا دعویٰ کرتے ہوئے کہا کہ اس اسکام میں کئی بڑے نام ہے لیکن حکومت چند نام کا افشاء کررہی ہے ۔ ڈاکٹر کے کیشو راؤ پر ناراضگی کی وجہ سے ان کے نام کو جاری کیا گیا ۔ ماباقی دوسرے ناموں کو خفیہ رکھا گیا ہے ۔ پروفیسر کودنڈا رام نے کہا کہ ٹی آر ایس کے دور حکومت میں بدعنوانیاں عروج پر پہونچ چکی ہیں ۔ ایک منظم سازش کے تحت ہی میڈیا میں ناموں کا انکشاف کیا جارہا ہے ۔ حکومت کی ایسی غیر یقینی صورتحال انہوں نے کبھی بھی نہیں دیکھی ہے ۔ ٹی آر ایس حکومت کی بدعنوانیوں کے تعلق سے تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی عوام میں شعور بیدار کرے گی ۔ اراضی اسکام میں حکومت کے اہم ذمہ دار شامل ہونے کی میڈیا میں خبریں شائع ہورہی ہیں تاہم چند لوگوں کو ہی خاطی قرار دیتے ہوئے ان کے ناموں کا حکومت ہی افشاء کررہی ہے ۔ ٹی آر ایس کے سکریٹری جنرل و رکن راجیہ سبھا ڈاکٹر کے کیشو راؤ پر اراضی اسکام میں ملوث ہونے کے الزامات پر پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے پروفیسر کودنڈا رام نے کہا کہ فہرست میں کئی نام ہے ۔ تاہم وہ سمجھنے سے قاصر ہے کہ چند ناموں کا ہی کیوں افشاء کیا جارہا ہے ۔ حکومت کسی ناراضگی سے افشاء کررہی ہے ؟ تمام نام ایک ساتھ افشاء کردیں تو بہتر ہوگا ۔ وہ سمجھتے ہیں کہ حکومت ہی ان ناموں کا سرکاری طور پر افشاء کررہی ہے ۔ صدر نشین تلنگانہ جوائنٹ ایکشن کمیٹی نے اراضی اسکام کی برسر خدمات جج کے ذریعہ تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا ۔ شہر حیدرآباد کے اطراف و اکناف جن سرکاری اراضیات پر قبضے ہورہے وہاں کا دورہ کرتے ہوئے وکلاء جوائنٹ ایکشن کمیٹی کی قیادت میں ایک راونڈ ٹیبل کانفرنس کا اہتمام کیا جائے گا ۔ یونیورسٹیز میں بھی حکومت کی جانب سے تحدیدات عائد کرنے پر سخت ناراضگی کا اظہار کیا ہے ۔ پروفیسر کودنڈا رام نے گروپ II امتحان پر پائے جانے والے شکوک کو دور کرنے اور خانگی تعلیمی اداروں میں فیس کو کنٹرول کرنے کا حکومت سے مطالبہ کیا ۔ گینگسٹر نعیم کی ڈائری پر تحقیقات کرانے پر زور دیا ۔ انہوں نے کہا کہ پروفیسر جئے شنکر کی برسی 21 جون کو سنگاریڈی سے یاترا شروع کرنے 24 کو سدی پیٹ میں یاترا کا اختتام کرنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا کہ یاترا کے دوران حکومت کی ناکامیوں کو آشکار کیا جائے گا ۔۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT