Wednesday , August 23 2017
Home / اضلاع کی خبریں / اراکین بلدیہ کاماریڈی و صدر نشین میں سرد جنگ

اراکین بلدیہ کاماریڈی و صدر نشین میں سرد جنگ

بلدی اجلاس کی قراردادکو کالعدم کردینے ضلع کلکٹر سے نمائندگی

کاماریڈی :17؍ اگست ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز ) اراکین بلدیہ و صدرنشین بلدیہ کے درمیان سرد مہری کی جنگ چل رہی ہے نائب صدرنشین بلدیہ کی صدارت میں اجلاس منعقد کرتے ہوئے بلدیہ کے اجلاس منعقد کئے جانے پر صدرنشین بلدیہ سشما نے ضلع کلکٹر ڈاکٹر یوگیتا رانا سے نمائندگی کرتے ہوئے اجلاس کے قرار داد کو کالعدم قرار دینے کی خواہش کی تو نائب صدرنشین بلدیہ سید مسعود علی کے ہمراہ اراکین بلدیہ محمد امجد، بھوم ریڈی ، گنیش و دیگر نے بلدیہ میں جاری دھاندلیوں پر تحقیقات کرانے کا ضلع کلکٹر سے مطالبہ کیا۔ تفصیلات کے بموجب بلدیہ کاماریڈی سے کانگریس پارٹی کی اکثریت ہونے کی وجہ سے صدرنشین اور نائب صدرنشین بلدیہ کا انتخابات میں صدرنشین بلدیہ کی حیثیت سے پیپری سشما اور نائب صدرنشین بلدیہ کی حیثیت سے سید مسعود علی کا انتخاب عمل میں آیا تھالیکن چند ناگزیر حالات کی بناء پر نائب صدرنشین بلدیہ سید مسعود علی نے کانگریس پارٹی سے علیحدگی اختیار کرتے ہوئے ٹی آرایس میں شمولیت اختیارکی تھی ان کے علاوہ کانگریس کے چند اراکین بلدیہ نے بھی ٹی آرایس میں شمولیت اختیار کرلی تھی اور کانگریس کو زبردست نقصان ہوا تھا صدرنشین بلدیہ کا تعلق کانگریس سے ہونے کی وجہ سے اور ٹی آرایس کی اکثریت میں اضافہ کے باعث اراکین بلدیہ اور صدرنشین بلدیہ کے درمیان تال میل ختم ہوگیا اور ہر مسئلہ کو تنازعہ بنانے کی کوشش کی جارہی ہے۔11؍ اگست کے روز منعقدہ اجلاس میں کمشنر بلدیہ وجئے لکشمی ویڈیو کانفرنس میں شرکت کرنے کی وجہ سے اجلاس میں تاخیر سے پہنچی اس بارے میں بھی اجلاس میں شور وغل ہونے پر صدرنشین بلدیہ نے اجلاس کو ملتوی کیا تھا دوبارہ اجلاس شروع کیا تو شور و غل کے ماحول کو دیکھتے ہوئے صدرنشین نے دوسری مرتبہ بھی اجلاس کو ملتوی کردیا اور چیمبر میں بیٹھی رہیںجس پر اراکین بلدیہ نے کمشنر پر دبائو ڈالتے ہوئے نائب صدرنشین بلدیہ کی صدارت میں اجلاس کو منعقد کرتے ہوئے ایجنڈہ کے نکات کی قرار داد کی منظوری عمل میں لائی صدرنشین بلدیہ نے اس کے خلاف کلکٹر کو شکایت کرتے ہوئے ایجنڈہ کے قرار داد کو کالعدم قرار دینے کی خواہش کی تو اراکین بلدیہ نے صدرنشین بلدیہ کیخلاف برہمی کا اظہار کرتے ہوئے دھاندلیوں کی ضلع کلکٹر کے ذریعہ تحقیقات کرانے کا مطالبہ کیا۔ بلدیہ میں جاری سرد مہری کی جنگ سے عہدیداروں کے کام کاج میں مشکلات پیش آرہی ہیں اور ہر روز جاری تنازعہ سے عوام میں تشویش پائی جارہی ہے۔

ایک بڑا ریل حادثہ ٹل گیا
محبوب نگر۔/17اگسٹ، ( سیاست ڈسٹرکٹ نیوز) ضلع محبوب نگر کے بالا نگر منڈل کے پدایاپلی کے قریب منگل کے دن ریلوے پٹریاں ٹوٹ جانے پر کی مین کی حاضر دماغی اور مستعدی سے ایک بڑے حادثہ کو ٹالا جاسکا۔ ریلوے عہدیداروں کے بموجب پدایا پلی میں واقع انڈسٹریز کے قریب 75/1 کے میل اسٹون کے قریب ریل پٹریاں ٹوٹی ہوئی دیکھ کر کی مین ابولو نے اسٹیشن ماسٹر کو مطلع کیا۔ لکھنؤ ایکسپریس جو قریب میں آرہی تھی روک دیا گیا۔ ریلوے اسٹاف نے فوری پٹری کی مرمت کرکے پٹریوں کی آمدورفت کو بحال کردیا۔ اس واقعہ کے پیش نظر دہلی سے یشونت پور جانے والی حضرت نظام الدین اکسپریس کو آدھے گھنٹے تک بالا نگر ریلوے اسٹیشن پر روک دیا گیا۔

TOPPOPULARRECENT