Friday , August 18 2017
Home / شہر کی خبریں / اردو مسکن کی بکنگ بند ، انچارج ملازم معطل

اردو مسکن کی بکنگ بند ، انچارج ملازم معطل

محکمہ اقلیتی بہبود کی پھر ایک مرتبہ ہٹ دھرمی ، ادبی و ثقافتی سرگرمیاں متاثر
حیدرآباد۔/23ڈسمبر، ( سیاست نیوز) محکمہ اقلیتی بہبود کے عہدیداروں کی ہٹ دھرمی نے پھر ایک مرتبہ پرانے شہر کی ادبی اور ثقافتی سرگرمیوں کو متاثر کردیا ہے۔ سکریٹری اقلیتی بہبود نے نامعلوم وجوہات کی بناء پر پرانے شہر کے خلوت علاقہ میں موجود اردو مسکن کی بکنگ کو بند کرنے کی ہدایت جاری کی۔ انہوں نے انچارج ملازم کی معطلی کے احکامات بھی جاری کئے۔ بتایا جاتا ہے کہ سکریٹری نے مذکورہ انچارج عارضی ملازم کے رویہ سے برہم ہوکر نہ صرف معطلی کی ہدایت دی بلکہ  اردو مسکن کی بکنگ کو روک دیا۔ اس سلسلہ میں روز نامہ سیاست میں خبر کی اشاعت کے بعد سکریٹری نے ماہ ربیع الاول کے تحت میلادالنبی سے متعلق پروگراموں کیلئے بکنگ کی اجازت دی اور میلادالنبی سے متعلق پروگرام اردو مسکن میں منعقد ہوئے۔ اسی دوران مختلف ادبی، ثقافتی تنظیموں کے نمائندے محکمہ اقلیتی بہبود کے چکر کاٹ رہے ہیں۔ ان کا مطالبہ ہے کہ پرانے شہر کے واحد ادبی مرکز اردو مسکن کی بکنگ کو فوری بحال کیا جائے۔ کئی ادبی تنظیموں نے مشاعروں، سمینارس اور کتابوں کی رسم اجراء جیسے پروگراموں کیلئے درخواست داخل کی لیکن سکریٹری کی ہدایت کے چلتے کسی کی بکنگ کو قبول نہیں کیا جارہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ ان حالات میں اردو اکیڈیمی کے عہدیدار بھی خود کو بے بس محسوس کررہے ہیں اور پروگراموں کے خواہشمند مایوس لوٹ رہے ہیں۔ بتایا جاتاہے کہ مقامی رکن اسمبلی سے مبینہ اختلافات کے بعد سکریٹری نے صرف مذہبی اُمور کے حد تک اردو مسکن کی بکنگ کی ہدایت دی۔ جبکہ دیگر سرگرمیوں کو بند کردیا گیا ہے۔ گزشتہ ایک ماہ سے بکنگ پر پابندی ہے جس کے نتیجہ میں پرانے شہر میں  ادبی سرگرمیاں بری طرح متاثر ہوئی ہیں۔ ادبی تنظیموں کی شکایت ہے کہ پرانے شہر میں ایسا کوئی ہال نہیں جہاں بہتر انداز میں کم خرچ پر ادبی پروگرام منعقد کئے جاسکیں۔ محکمہ اقلیتی بہبود کا بکنگ روک دینے کا فیصلہ دراصل اردو دشمنی کے مترادف ہے۔ عوامی نمائندوں کی توجہ دہانی کے باوجود محکمہ اقلیتی بہبود کے اعلیٰ عہدیدار اپنے موقف پر اٹل ہیں اور وہ نامعلوم وجوہات کے سبب اس سلسلہ میں ادبی تنظیموں کو کوئی موقع فراہم کرنے تیار نہیں۔ واضح رہے کہ پرانے شہر کا اردو مسکن ایسا واحد مرکز ہے جہاں بیک وقت 2 ہال میں مختلف پروگرام منعقد کئے جاسکتے ہیں۔ حکومت کو اس جانب فوری توجہ دینے کی ضرورت ہے تاکہ اردو کے مرکز میں پرانے شہر میں ادبی سرگرمیوں کا احیاء ہوسکے۔

TOPPOPULARRECENT