Monday , September 25 2017
Home / سیاسیات / اروناچل اسمبلی سیشن کے پیشگی انعقاد کے احکام پر سپریم کورٹ کا سوال

اروناچل اسمبلی سیشن کے پیشگی انعقاد کے احکام پر سپریم کورٹ کا سوال

نئی دہلی /5 فروری (سیاست ڈاٹ کام) سپریم کورٹ نے آج گورنر اروناچل پردیش جے پی راج کھووا کے اس فیصلہ پر سوال اٹھایا کہ اسمبلی سیشن کو رواں سال ماہ جنوری سے قبل گزشتہ سال کے دسمبر میں منعقد کیا گیا اور یہ استفسار کیا کہ اگر یہ اجلاس پہلے طے شدہ شیڈول کے مطابق منعقد کیا جاتا تو کیا فرق ہوتا؟۔ جسٹس جے ایس کھیہر کی سربراہی والی پانچ ججوں کی دستوری بنچ نے کہا کہ اگر اسمبلی کی کارروائی پہلے سے طے شدہ پروگرام کے مطابق 14 جنوری کو منعقد کی جاتی، نہ کہ 16 دسمبر کو، تب ایسی صورت میں کیا تبدیلی ہوتی؟۔ یہ سوال اس وقت سامنے آیا، جب بعض باغی کانگریس ارکان اسمبلی کی پیروی کرنے والے سینئر ایڈوکیٹ راکیش دیویدی نے کہا کہ اس وقت کے اسپیکر این ریبیا کے خلاف کرپشن کے سنگین الزامات ہیں اور گورنر کو دستور کے تحت یہ اختیار ہے کہ اسمبلی سیشن کو پیشگی منعقد کرنے کے احکام جاری کریں اور یہ ہدایت دیں کہ اسپیکر کی برطرفی کا مسئلہ سب سے مقدم رکھا جائے۔ بنچ کے دیگر ارکان جسٹس دیپک مصرا، جسٹس ایم بی لوکور، جسٹس پی سی گھوش اور جسٹس ایل بی رمنا ہیں۔ اس دستوری بنچ نے کہا کہ گورنر نے جب پیشگی تاریخ مقرر کرنے کا فیصلہ کیا تو اس کے پیش نظر کوئی مقصد ہونا چاہئے۔

TOPPOPULARRECENT