Wednesday , May 24 2017
Home / سیاسیات / اروناچل پردیش میں طلبہ کا چین مخالف احتجاج

اروناچل پردیش میں طلبہ کا چین مخالف احتجاج

ایٹانگر 24 اپریل (سیاست ڈاٹ کام) اروناچل پردیش کی طلبہ یونین نے آج ایک احتجاجی جلوس نکالا جس میں چین کے اقدام کی مذمت کی گئی جس میں شمال مشرقی ہند کی ریاست اروناچل پردیش کے 6 مقامات کے سرکاری نام تبدیل کرکے اُن کے نئے نام رکھ دیئے ہیں۔ طلبہ پلے کارڈس اور بیانرس اُٹھائے ہوئے تھے اور چین مخالف نعرہ بازی کررہے تھے۔ صدر چین ژی جنگ پنگ کا پتلا بھی نذر آتش کیا گیا۔ اروناچل پردیش کبھی بھی چین کا حصہ نہیں رہا۔ تاہم چین اروناچل پردیش کے علاقہ کو چین کا ایک حصہ قرار دیتا ہے۔ یونین کے صدر باڈگان نے کہاکہ اروناچل پردیش ہندوستان کا اٹوٹ حصہ ہے۔ اگر تاریخ کا مشاہدہ کیا جائے تو ریاستی عوام نے تحریک آزادی میں بھی شرکت کی تھی۔ یہ ریاست کبھی بھی چین کے زیراقتدار نہیں رہی۔ اُنھوں نے ریاستی حکومت کی اِس مسئلہ پر خاموشی کو بھی تنقید کا نشانہ بنایا اور کہاکہ اِس مسئلہ پر سنجیدہ رویہ ضروری ہے۔

Leave a Reply

TOPPOPULARRECENT