Monday , September 25 2017
Home / Top Stories / اروناچل پردیش کے سابق چیف منسٹر کالیکھو پل کی خودکشی

اروناچل پردیش کے سابق چیف منسٹر کالیکھو پل کی خودکشی

حامیوں کا پُرتشدد احتجاج، ریاست بھر میں تین دن کا سرکاری سوگ

ایٹانگر۔/9اگسٹ، ( سیاست ڈاٹ کام ) ارونا چل پردیش کے سابق چیف منسٹر اور کانگریس کے باغی لیڈر کالیکھو پل جنہوں نے سپریم کورٹ کے احکامات پر گذشتہ ماہ اپنے عہدہ سے استعفی دے دیا تھا آج مبینہ طور پر خود کشی کرلی ہے۔ پال کی موت کی خبر پھیلتے ہی ان کے حامیوں کی کثیر تعداد علاقہ نیتی بہار میں واقع چیف منسٹر پیما کھنڈو کے بنگلہ ( قیامگاہ ) پر اکٹھا ہوگئی اور پال کی غیر طبعی موت کی تحقیقات کا مطالبہ کیا۔احتجاجیوں نے ڈپٹی چیف منسٹر کی زیر تعمیر ایک عمارت اور 2سرکاری بنگلوں کو بھی آگ لگادی۔ ایک اعلیٰ پولیس عہدیدار نے بتایا کہ 47سالہ پال نے اپنے بیڈ روم میں سیلنگ فیان سے لٹک کر پھانسی لے لی۔ پال کی ایک بیوی نے دیکھا کہ چیف منسٹر کی سرکاری قیامگاہ میں ان کی نعش لٹک رہی ہے جبکہ اس قیامگاہ کا ہنوز تخلیہ نہیں کیا گیا ہے۔ ڈاکٹروں کے مطابق پل کی موت صبح 7اور 7;30 بجے کے درمیان واقع ہوئی ہے۔

خاندان کے ذرائع نے بتایا کہ پل  کی 3بیویاں اور 4 بچے ہیں۔ گذشتہ ایک ہفتہ سے گوشہ تنہائی میں تھے اور کسی دوسرے آدمی سے ملاقات نہیں کررہے تھے۔ وہ، مختصر مدت کیلئے جاریہ سال 19 فبروری سے جولائی تک چیف منسٹر کے عہدہ پر فائز تھے۔ پال کی موت کی اطلاع ملتے ہی ان کے حامیوں نے چیف منسٹر کے بنگلہ کا گھیراؤ کردیا اور کہا کہ پال کی نعش کو ان کے بنگلہ ای ایس ایس سیکٹر سے باہر نکالنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ بنگلہ احاطہ میں ہی دفن کردینے کا مطالبہ کیا۔ احتجاجیوں نے باہر سے لائے گئے ایک تابوت کو نقصان پہنچاتے ہوئے آگ لگادی۔ دریں اثناء بعض حامیوں نے قریب میں واقع ڈپٹی چیف منسٹر چوانا مین کی قیامگاہ پہنچ کر حصار بندی کی دیوار اور تقریباً 10گاڑیوں پر حملہ کردیا۔ اگرچیکہ ہجوم نے زیر تعمیر ایک عمارت کو بھی آگ لگادی لیکن کوئی جانی نقصان نہیں ہوا۔ دارالحکومت میں کشیدہ صورتحال کے پیش نظر ریاستی پولیس ، انڈو ۔ تبت بارڈر پولیس کو انتہائی اہم شخصیتوں کے رہائشی علاقہ کو روانہ کردیا گیا جہاں ریاستی وزراء قیام پذیر ہیں۔ واضح رہے کہ جاریہ بغاوت کرنے والے کانگریس ارکان اسمبلی کی پال نے قیادت کی تھی اور ریاست میں 19فبروری کو صدر راج نافذ کرنے کے چند گھنٹوں بعد بی جے پی کی تائید سے چیف منسٹر کی حیثیت سے جائزہ لیا تھا۔ لیکن ماہ جولائی میں سپریم کورٹ نے انھیں چیف منسٹر کا عہدہ چھوڑ دینے اور نابم ٹو کی کو اقتدار حوالے کرنے کا حکم دیا تھا۔دریں اثناء حکومت نے ریاست بھر میں تین دن کا سوگ منانے کا اعلان کیا ہے۔

٭٭ صدر جمہوریہ پرنب مکرجی نے سابق چیف منسٹر ارونا چل پردیش کالیکھو پل کی موت پر تعزیت کا اظہار کیا ہے اور کہاکہ ان کی موت سے ریاست اور ملک کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے۔ صدر جمہوریہ نے پال کی اہلیہ ڈانگ ویمائی کو ایک تعزیتی پیام روانہ کیا ہے۔ علاوہ ازیں ہماچل پردیش سے وابستہ مرکزی مملکتی وزیر داخلہ کرن رجیجو نے بھی پل کی بے وقت موت پر صدمہ کا اظہار کیا ہے۔

٭٭ وزیر اعظم نریندر مودی نے آج ارونا چل پردیش کے سابق چیف منسٹر کالیکھوپل کے انتقال پر اظہار تعزیت کیا ہے اور ریاست کیلئے ان کی خدمات کو ناقابل فراموش قرار دیا ہے۔ وزیر اعظم نے اپنے ٹوئٹر پر کہا کہ میری قلبی ہمدردی کلیکو پال کے خاندان اور حامیوں کے ساتھ ہے جنہوں نے ارونا چل پردیش کی گرانقدر خدمات انجام دی ہیں۔

TOPPOPULARRECENT