Sunday , August 20 2017
Home / Top Stories / ارون جیٹلی آدھے سچ اور آدھے خوبصورت جھوٹ کے ماہر : عآپ

ارون جیٹلی آدھے سچ اور آدھے خوبصورت جھوٹ کے ماہر : عآپ

وزیر فینانس سے پانچ سوالات کے واضح جواب دینے کا مطالبہ ۔ دہلی کرکٹ اسوسی ایشن میں بے قاعدگیوں کا پارٹی کا دعوی
نئی دہلی 18 ڈسمبر ( سیاست ڈاٹ کام ) عام آدمی پارٹی نے آج مرکزی وزیر فینانس ارون جیٹلی کو ایک بار پھر تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور انسے دہلی کرکٹ ادارہ ڈی ڈی سی ای میں کرپشن سے متعلق پانچ سوالات کئے ہیں۔ عام آدمی پارٹی نے ارون جیٹلی پر الزام عائد کیا ہے کہ انہوں نے ان پر عائد الزامات پر نامناسب رد عمل کا اظہار کیا ہے ۔ عام آدمی پارٹی لیڈر آشوتوش نے وزیر فینانس کو نصف سچائی اور نصف خوبصورت جھوٹ کا ماہر قرار دیا اور کہا کہ مسٹر جیٹلی کا یہ ادعا گمراہ کن ہے کہ ان کے خلاف کوئی مخصوص الزامات نہیں ہیں ۔ ارون جیٹلی نے ان پر عائد الزامات کی سختی سے تردید کی ہے اور یہ ادعا کیا ہے کہ یہ در اصل چیف منسٹر دہلی اروند کجریوال کی پروپگنڈہ تکنیک ہے جس کا مقصد خود ان کے خلاف سی بی آئی کی کارروائی سے پیدا شدہ ماحول سے عوام کی توجہ ہٹائی جائے ۔ یہاں میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے آشوتوش نے الزام عائد کیا کہ دہلی اینڈ ڈسٹرکٹ کرکٹ اسوسی ایشن کی جانب سے 21 سنچری نامی خانگی کمپنی کو فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم میں 10 کارپوریٹ باکسیس کو سب لیز پر جاری کرنے کی اجازت دیدی گگئی تھی ۔

انہوں نے ادعا کیا کہ یہ فرم در اصل ارون جیٹلی کے ایک دوست کی ہے اور اس فیصلے کے نتیجہ میں اس فرم کو کم از کم پانچ کروڑ روپئے کا مالی فائدہ ہوا تھا ۔ عام آدمی پارٹی لیڈر نے ارون جیٹلی سے مطالبہ کیا کہ وہ یہ وضاحت کریں کہ 21 سنچری نامی فرم کے ارکان کون تھے اور آیا ان میں کوئی خود مسٹر جیٹلی کا رشتہ دار تو نہیں ہے ۔ انہوں نے ارون جیٹلی پر الزام عائد کیا کہ انہوں نے او این جی سی پر دباؤ ڈال کر ہاکی انڈیا کیلئے پانچ کروڑ روپئے جاری کروائے ۔ انہوں نے اس دباؤ کی وجہ جاننی چاہی ۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ فیروز شاہ کوٹلہ اسٹیڈیم کی تعمیر جدید میں بھی بے شمار بے قاعدگیاں ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ حالانکہ عوامی شعبہ کی کمپنی ایف پی آئی ایل کو 57 کروڑ روپئے ادا کئے گئے جبکہ جملہ اخراجات 114 کروڑ میں مابقی  57 کروڑ روپئے نو خانگی کمپنیوں کو جاری کئے گئے ۔ انہوں نے کہا کہ تمام نو کمپنیوں کے ڈائرکٹرس اور ان کے ای میل پتے وغیرہ ایک ہی تھے ۔

انہوں نے یہ جاننا چاہا کہ آیا ارون جیٹلی اس تفصیل سے واقف ہیں اور آیا یہ کرپشن نہیںہے ؟۔ ارون جیٹلی کے اس ادعا پر کہ ایک تحقیقاتی رپورٹ میں انہیں  بری کردیا گیا ہے آشوتوش نے کہا کہ وزیر فینانس نے یہ حقیقت چھائی ہے کہ مرکزی ایجنسی نے جن جرائم کی نشاندہی کی ہے ان میں جیل کی سزا بھی ہوسکتی ہے ۔ عام آدمی پارٹی لیڈر نے کہا کہ ہم نے مخصوص الزامات عائد کئے ہیں اور ارون جیٹلی نے اس پر واضح جواب نہیں دیا ہے ۔ اسی لئے ہم نے ان سے پانچ سوال کئے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ ارون جیٹلی کو چاہئے کہ وہ ہاکی انڈیا کے سربراہ نریندر بترا سے بھی اپنے تعلقات کی وضاحت کریں۔ انہوں نے کہا کہ گذشتہ مہینے ہی حکومت دہلی نے ڈی ڈی سی اے کی بے قاعدگیوں کی تحقیقات کا آغاز کیا ہے ۔ اس کی اطلاع حکومت دہلی کو وزارت اسپورٹس سے ملی تھی اور وزارت اسپورٹس کو اس تعلق سے مرکزی وزارت داخلہ کی جانب سے اطلاع دی گئی تھی ۔

TOPPOPULARRECENT